کانگریس اقتدار میں آئی تودھرم سنسدکی نفرت انگیزتقریرکرنے والوں کو سزا دیں گے:ہریش راوت

دہرادون:اتراکھنڈ کے مضبوط کانگریس لیڈر اور ریاست کے سابق وزیراعلیٰ ہریش راوت نے کہا ہے کہ اگر ان کی پارٹی اقتدار میں آتی ہے تو وہ ہریدوار کی دھرم سنسد میں نفرت انگیز تقریر کرنے والوں کو سزا دیں گے۔ہریش راوت نے کہاہے کہ وہ نفرت انگیز تقریر کیس میں فوری کارروائی کریں گے۔ ریاست اتراکھنڈ میں کانگریس پارٹی میں اندرونی اختلافات کی خبروں کو مسترد کرتے ہوئے ہریش راوت نے کہاہے کہ ہم سونیا جی اور راہل جی کی قیادت میں ایک ہیں۔ مجھے یقین ہے کہ ہم اسمبلی انتخابات جیتیں گے۔ ہرک سنگھ راوت سے متعلق سوال پر انہوں نے کہاہے کہ ہرک نے اپنی غلطی پر معافی مانگ لی ہے۔ غور طلب ہے کہ ہرک سنگھ راوت کے بارے میں دلچسپ بات یہ ہے کہ انہوں نے 2016 میں ہریش راوت کی قیادت والی کانگریس حکومت کے خلاف بغاوت کر دی تھی۔ ہرک کے ساتھ اس وقت کے نو ایم ایل اے بھی بی جے پی میں شامل ہوئے تھے۔ ہرک سنگھ راوت کو اب بی جے پی اور پشکر سنگھ دھامی کو اتراکھنڈ کی کابینہ سے نکال دیا گیا ہے۔ پنجاب کانگریس کے انچارج ہریش راوت نے کہاہے کہ منیش تیواری ان کے چھوٹے بھائی کی طرح ہیں۔ ہریش راوت نے کہاہے کہ میرے شامل ہونے سے پہلے پنجاب کانگریس وہاں تقسیم تھی۔ تاہم انہوں نے کہاہے کہ پنجاب کانگریس کے اندرونی اختلافات کومنظم کیا جا سکتا ہے۔ پنجاب کے وزیراعلیٰ چرنجیت سنگھ چنی اچھا کام کر رہے ہیں۔