ہم نے اپنے مطالبات رکھے لیکن وزیر اعظم نے کوئی ٹھوس یقین دہانی نہیں کرائی: محمد یوسف تاریگامی

سرینگر: سی پی آئی (ایم) کے سینئر لیڈر اور پیپلز الائنس فار گپکار ڈیکلریشن (پی اے جی ڈی) کے ترجمان محمد یوسف تاریگامی نے کہا ہے کہ کُل جماعتی اجلاس کے دوران وزیر اعظم نریندر مودی نے انہیں بغور سنا لیکن مطالبات پورا کرنے اور گوناگوں خدشات کا ازالہ کرنے کی کوئی ٹھوس یقین دہانی نہیں کرائی۔تاریگامی نے فون پر بتایاکہ جہاں تک سوال توقعات یا میٹنگ سے کیا نکل کر آیا؟ اس کا ہے تو پہلی بات یہ ہے کہ ہمیں بولنے کا موقع دیا گیا اور دوسری بات یہ کہ ہمیں اپنے مطالبات و خدشات پر وزیر اعظم کی طرف سے کوئی ٹھوس یقین دہانی نہیں کرائی گئی، میں اس سے زیادہ کچھ نہیں کہوں گا۔انہوں نے کہاکہ میں نے وزیر اعظم سے کہا کہ آپ نے میٹنگ بلائی اور ہمیں بولنے کا موقع دیا جو ایک قابل تحسین اقدام ہے لیکن اچھا یہ ہوتا اگر ایسی ایک میٹنگ 5 اگست 2019 کے فیصلے لئے جانے سے قبل بلائی جاتی۔یہ پوچھے جانے پر کہ کیا آنے والے دنوں میں سرینگر میں ’پی اے جی ڈی‘ کی کوئی میٹنگ متوقع ہے؟! ان کا کہنا تھا کہ فی الحال وہ دہلی میں ہی موجود ہیں۔ ان کا
مزید کہنا تھاکہ میں ہفتے کو سری نگر کے لئے روانہ ہو جائوں گا۔ باقی لیڈران کا کیا پروگرام ہے میں نہیں جانتا، میں نے کسی سے پوچھا بھی نہیں۔
خیال رہے کہ قومی راجدھانی نئی دہلی میں جمعرات کے روز وزیر اعظم مودی نے اپنی سرکاری رہائش گاہ پر جموں و کشمیر کی تمام سیاسی جماعتوں کے رہنمائوں کے اجلاس کی صدارت کی۔ اجلاس میں 8 سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے 14 لیڈران بشمول 4 سابق وزرائے اعلیٰ نے شرکت کی۔