کوروناوائرس:ہمیشہ کے لیے نہیں کر سکتے لاک ڈاؤن:کیجریوال

نئی دہلی:ملک کی راجدھانی دہلی میں کوروناوائرس کے مسلسل بڑھتے ہوئے معاملات کے درمیان حکومت کی جانب سے کئے گئے انتظاموں کو لے کر ریاست کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ دہلی میں کورونا کے معاملوں میں اضافہ درج کیا گیا ہے، لیکن فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے، میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ ہم مکمل طور پر تیار ہیں۔ہم ریاست میں مستقل لاک ڈاؤن نہیں کر سکتے ہیں۔کیجریوال نے کہا کہ کورونا کے معاملے بڑھنے تشویش ہے لیکن ڈرنے کی ضرورت نہیں ہے، میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ ہماری حکومت کوروناوایرس سے چار قدم آگے ہے۔وزیر اعلی کیجریوال نے کہا کہ کوروناوائرس رہے گا اس لیے اس کے ساتھ رہنے کا انتظام کرنا پڑے گا۔دہلی کے وزیر اعلیٰ ہونے کے ناطے دو چیزوں پر میری فکر ہوگی۔پہلی اگر موت کے اعداد و شمار تیزی سے بڑھنے لگے اور دوسراکورونا کے مریض زیادہ ہو ں اور بیڈکم ہوں۔ دہلی میں گزشتہ چند دن سے روزانہ 1000 سے زیادہ لوگ کورونا سے متاثر ہو رہے ہیں۔ایسے حالات میں وزیر اعلی کیجریوال کی یہ کانفرنس اہم مانی جا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر انتظامات کم پڑ گیا تو موت سے بھی زیادہ ہوں گی۔گزشتہ ایک ہفتے میں ہم نے بیڈ کاکافی انتظام کر لیا۔17386 میں سے 2100 مریض اسپتال میں ہیں، باقی گھروں میں کووارنٹین سنٹر میں ہیں۔آج تک 6600 بیڈ کا انتظام ہو گیا ہے۔ایک ہفتہ پہلے 4500 بیڈ کا انتظام کیا گیا۔گزشتہ ایک ہفتے میں ہم نے مزید 2100 بیڈوں کا انتظام کر لیا ہے۔9500 بیڈ اگلے ایک ہفتے میں اور تیار ہو جائیں گے۔پرائیویٹ بیڈ 677 سے بڑھا کر 2677 بیڈ کر دیئے ہیں۔5 جون تک پرائیویٹ میں 3677 بیڈ ہو جائیں گے۔ دہلی کے وزیر اعلی نے کہا کہ جتنے لوگوں کو کورونا ہو رہا ہے زیادہ تر لوگ بغیر علامات والے تھے اس لیے گھروں میں ہیں زیادہ تر لوگ ٹھیک ہو رہے ہیں۔اگر کسی کے گھر میں کورونا مریض ہو تو وہ کہاں جائے کیونکہ لوگوں کو اس بارے میں معلومات نہیں ہوتی۔ ایک ایپ بنا لیا ہے۔پیر کو اس کو لانچ کریں گے۔یہ بتائے گا کہ کس اسپتال میں کتنے بیڈ ہیں کتنے خالی ہیں یا کتنے وینٹی لیٹر ہیں اور کتنے خالی ہیں۔گزشتہ دنوں کچھ ایسے معاملے آئے جس میں مریض پریشان ہوتا رہا اور اس کو اچھے وینٹی لیٹر نہیں ملا اور دوسری طرف ہم یہ کہتے رہے کہ بیڈ اور وینٹی لیٹر خوب دستیاب ہیں۔سی ایم نے کہا کہ گندی سیاست کی وجہ سے کچھ لوگ گمراہ کرنے والے ویڈیو بناتے ہیں ویڈیو کہیں اور کا ہوتا ہے۔صبح سے ایک ویڈیو چل رہا ہے جس میں کہا جا رہا ہے دیکھئے کتنی لاشیں ہیں۔کسی نے ایک ویڈیو بنا دیا اور کہا کہ دیکھے دہلی حکومت کے اسپتال میں کتنا گندی کھانا پتہ لگا وہ اسپتال دہلی حکومت کا ہے ہی نہیں۔ کیجریوال نے کہا کہ ڈاکٹر اور نرس نے محنت کرکے موت کے اعداد و شمار کو اتنا کم رکھا ہوا ہے اس کے بعد ہم یہ ویڈیو بناتے ہیں کہ دیکھئے لاشیں۔فرضی ویڈیو چل رہے ہیں میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ اگر کوئی صحیح ویڈیوز آئے گا تو میں اس پر کارروائی کروں گا۔کوروناوائرس کا قہر ختم ہونے کا نام ہی نہیں لے رہا ہے۔وزارت صحت کی طرف سے جاری اعداد و شمار کے مطابق ہفتے کی صبح تک ملک میں 173763 مریض سامنے آئے ہیں، جبکہ 4971 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ 24 گھنٹے میں سب سے زیادہ نئے کیس اور سب سے زیادہ اموات ہوئی ہیں۔24 گھنٹے میں 7964 نئے کیس سامنے آئے ہیں جبکہ 265 لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔ حالانکہ 82370 مریض اس بیماری کو شکست دینے میں کامیاب بھی ہوئے ہیں۔