غلام نبی آزادنے مودی کی تعریف نہیں کی،لوگوں نے طنزکونہیں سمجھا:سندیپ دکشت

کانگریس کے ’باغیوں‘ کاگروپ متحرک،شملہ سے چنئی تک کادورہ ہوگا
نئی دہلی:کانگریس کے باغی لیڈروں کاگروپ (جی 23 )کیمپ کا پروگرام صرف جموں کے بعد ختم ہونے والا نہیں ہے۔ ذرائع کے مطابق جی 23 رہنماؤں نے شملہ سے چنئی جانے کا منصوبہ بنایا ہے۔موصولہ اطلاعات کے مطابق کانگریس کے باغی جی 23 کیمپ کا پروگرام جموں کے بعد ہی ختم نہیں ہوگا۔ اعلیٰ ذرائع نے بتایاہے کہ ہم نے یہ پیغام دیا ہے کہ اب قدم پیچھے نہیں ہٹنے والے ہیں۔ ذرائع کے مطابق غلام نبی آزاد کی سربراہی میں جموں میں ایک بڑی میٹنگ منعقد کرنے اور اپنے آپ کو حقیقی کانگریس ہونے کا دعوی کرنے کے بعد اب جی 23 کے رہنماؤں نے شملہ سے چنئی تک ایسے پروگراموں کا منصوبہ بنایا ہے۔ اسی سلسلے میں ان رہنماؤں کا اگلا دورہ کروکشیتر میں ہوسکتا ہے۔دریں اثنا تنظیم میں تبدیلی اورمستقل صدر کی تقرری کا مطالبہ کرتے ہوئے سونیا گاندھی کو خط لکھنے والے رہنماؤں میں سے ایک سندیپ دکشت نے غلام نبی آزاد کے دفاع میں بتایاہے کہ آزادنے وزیر اعظم کی تعریف نہیں کی تھی ۔لوگوں نے نہیں سمجھا۔ میں پارٹی کے رہنماؤں سے کہنا چاہتا ہوں کہ بیوقوف کی طرح باتیں نہ کریں ، کوئی جنرل سکریٹری ہے ، کوئی سینئر ممبر ہے ، ایسی بیان بازی نہ کریں۔سندیپ دکشت نے کہاہے کہ اگر آزاد کا تعلق جموں سے ہے تو وہ اور کہاں جائیں گے۔میں کہوں گا کہ ان لوگوں کو یہ کام بہت پہلے کرنا چاہیے تھا ، میں یہ بات بہت پہلے ہی کہہ رہا تھا۔ سندیپ دکشٹ نے یہاں تک کہاہے کہ وزیر اعظم نے یہ ویکسین لی ہے ، لوگوں کا اعتماد ہوگا،ہم اس کا خیرمقدم کرتے ہیں۔اشاروں میں منموہن حکومت کی سابقہ حکومت پر طنزکرتے ہوئے سندیپ دکشت نے کہا کہ کم سے کم مودی جی ماسک نہیں پہنے ہیں ، جو ہے وہ سامنے ہے، یہ سب پہلے بھی ہوتا تھا ، یہاں تک کہ وزیراعظم بھی یہ سب کرتے تھے ، لیکن اسے چھپا کر کرتے تھے ، لیکن مودی جی ایسا نہیں کرتے ہیں۔