گجرات:کورونا ضوابط کی خلاف ورزی،بی جے پی لیڈراور سابق وزیر بیٹے سمیت گرفتار

کورونا قوانین کی خلاف ورزی کرکے شادی میں جمع کیے تھے 6ہزار لوگ
احمدآباد:گجرات میں بی جے پی کے سابق وزیر کانتی گامیت اور اس کے بیٹے سمیت 18 افراد کو کورونا وائرس کی وجہ سے جاری کردہ ہدایات کی خلاف ورزی کرنے پر گرفتار کیا گیا ہے۔ صرف یہی نہیں تاپی کے سونگرا تھانے کے ماتحت علاقے میں ہوئی اس شادی میں جو پولیس اہلکاروں ڈیوٹی کررہے تھے انہیں بھی معطل کردیا گیا ہے اور ان کے خلاف تحقیقات کا حکم بھی دیا گیا ہے۔ کانتی گامیت نے اپنی پوتی کی منگنی کی تقریب کے دوران ہزاروں کا مجمع اکٹھا کیا تھا۔ تقریب میں آنے والی ہجوم اور گربا کھیلنے کا ویڈیو وائرل ہونے کے بعد بی جے پی رہنما اور سابق وزیر کانتی گامیت اور اس کے بیٹے سمیت 18 افراد کو گرفتار کیاگیا ہے۔ اس واقعے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی ہے، جس میں ہزاروں افراد بغیر ماسک پہنے اور سوشل ڈسٹنسنگ کی دھجیاں اڑا رتے دکھائی دے رہے ہیں۔ اس سارے واقعے کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد وزیر داخلہ نے تحقیقات کا حکم دیا۔ واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس نے کانتی کامیت کے خلاف آئی پی سی کی دفعہ 308، دفعہ 188،269،270 اور وبائی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیاتھا۔ گجرات میں کورونا اصولوں کی خلاف ورزی کے الزام میں گرفتار کرنے کا یہ پہلا واقعہ ہے۔ وہیں خود کانتی گامیت نے ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد اپنی غلطی کا اعتراف کیا ہے۔ لوگ سوشل میڈیا پر یہ سوالات اٹھا رہے ہیں کہ جب عام آدمی کی شادی کی بات آتی ہے تو حکومت 100 لوگوں کی اجازت دینے کی بات کرتی ہے، لیکن بی جے پی قائد کی پوتی کی شادی میں 6000 سے زائد افراد شریک ہوئے۔