گڈ گورننس،ترقی کے مسائل پر لڑیں بہار الیکشن،مسائل کم پڑرہے ہوں توہم بھجوائیں گے:سنجے راوت

نئی دہلی:شیوسینا لیڈر اور راجیہ سبھا رکن سنجے راوت نے کہا ہے کہ بہار اسمبلی انتخابات صرف گڈ گورننس، ترقی اور ریاست میں موجودہ نظم ونسق کے حالات پر لڑنا چاہئے۔ انہوں نے سختی سے کہا کہ اگر اس طرح کے مسائل کی کمی ہے تو ہم ممبئی سے پارسل بھیج دیں گے۔دراصل راوت بہار انتخابات سے قبل اداکار سوشانت سنگھ راجپوت کی موت کی سیاست کرنے کے لئے بی جے پی اور جے ڈی یو کی مخلوط حکومت کو نشانہ بنارہے تھے۔ راوت نے یہ بھی کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے حکومت نے پارلیمنٹ کا مون سون اجلاس وقت سے پہلے ہی ختم کردیا ہے لیکن بہار کے انتخابات ہو رہے ہیں۔ انہوں نے سوالیہ انداز میں پوچھا کہ کیا بہار میں کورونا وائرس کا اثر ختم ہوچکا ہے؟سنجے راوت کا یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب الیکشن کمیشن نے بہار میں تین مراحل میں انتخابات کرانے کا اعلان کیا ہے۔ 28 اکتوبر، 3 نومبر اور 7 نومبر کو بہار میں ووٹ ڈالے جائیں گے، جبکہ ووٹوں کی گنتی 10 نومبر کو ہوگی۔ جب ان سے یہ پوچھا گیا کہ بہار انتخابات میں سوشانت سنگھ راجپوت کی موت کا معاملہ بھی ایک مسئلہ ہوگا ،تو راوت نے کہاکہ مرکز اور ریاست (بہار) نے صرف سوشانت سنگھ راجپوت کی موت کو ایک سیاسی مسئلہ بنانے کے لئے اس معاملے پر سیاست کی۔ جے ڈی (یو) نے پہلے ہی اس سمت میں راجپوت کے نام والے پوسٹر شائع کیے ہیں اور اسے تشہیر میں بھی لایا ہے۔اسے انتخابی مسئلہ بنایا جارہا ہے کیونکہ حکومت بہار کے پاس ترقیاتی امور یا گڈ گورننس کے بارے میں بولنے کے لیے کچھ بھی نہیں ۔