گوتم گمبھیر نے کجریوال کو گھیرا،کورونا پر سچ چھپانے کا الزام

نئی دہلی:دہلی میں بڑھتے ہوئے کورونا کیس کے حوالے سے الزامات اور جوابی ردعمل کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔گجرات کی صورت حال پرکوئی چرچانہیں ہورہی ہے اوربی جے پی احمدآبادکی بدحالی پرکوئی سوال نہیں اٹھارہی ہے۔سابق کرکٹر اوربھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی) کے رکن پارلیمنٹ گوتم گمبھیر نے کہاہے کہ دہلی کی حالت تشویشناک ہے۔ کیجریوال حکومت کوپوراکھول نہیں دینا چاہیے تھا۔ اس کے بعد سے شراب کی دکانیں کھل گئیں ۔صورتحال اب تک ٹھیک نہیں ہوسکی۔بی جے پی کے ممبرپارلیمنٹ گوتم گمبھیر نے کہاہے کہ آپ (سی ایم اروند کیجریوال) کہہ رہے ہیں کہ وہ ایک کروڑ لوگوں کو کھانے کا اناج دے رہے ہیں ، اگلے دن 25 لاکھ لوگ وہاں سے چلے گئے۔ حکومت نے دعویٰ کیاہے کہ ہم لوگوں کو کھانا کھلا رہے ہیں ، لیکن آج تک باورچی خانے کے بارے میں معلومات نہیں دی گئیں۔ صورتحال بہت خراب ہے۔ عام لوگوں کو پریشانی کاسامناہے۔گوتم گمبھیر نے کہا کہ کوئی بھی سیاستدان یا مشہور شخص کومسئلہ نہیں ہوسکتا۔ انہیں اسپتالوں میں بستر ملیں گے ، لیکن عام آدمی کو پریشانی ہوگی۔ انہیں بسترنہیں مل رہے ہیں۔ لوگوں کو ایک بہت بڑی پریشانی ہے۔ کیجریوال حکومت نے دعویٰ کیاہے کہ 30 ہزار بیڈ کا انتظام کیا گیا ہے ، لیکن زمینی حقیقت کچھ اورہے۔