گاؤن-کوٹ سے کورونا پھیلنے کا خوف،سپریم کورٹ میں نیا ڈریس کوڈ لاگو کر سکتے ہیں چیف جسٹس

نئی دہلی:کورونا وائرس کی وجہ سے سپریم کورٹ کو سماعت کے نظام میں ایک اور تبدیلی کرنی پڑے گی۔ججوں اور وکلاء کی شناخت رہے سیاہ لباس شاید کچھ دن کے لئے عدالت سے دور رہے۔چیف جسٹس آف انڈیا (سی جے آئی) شرد اروند بوبڑے نے کہا کہ ڈاکٹرس نے گاؤن اور کوٹ پہننے سے منع کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس سے وائرس کے آسانی سے پھیلنے کا خطرہ ہے۔منگل کو سماعت کے دوران، ان کی بنچ کے جج سفید قمیض اور بینڈ پہن کر بیٹھے۔سی جے آئی بوبڑے نے کہا کہ وہ باقی ججوں اور وکلاء کے لئے ڈریس کوڈ جاری کر سکتے ہیں۔سپریم کورٹ میں فی الحال ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے مقدمات کی سماعت ہو رہی ہے۔منگل کوسی جے آئی کے ساتھ بنچ میں جسٹس اند ملہوترا اور جسٹس شکشی رائے بھی موجود تھے۔اس وقت سینئر ایڈووکیٹ کپل سبل اپنا موقف رکھ رہے تھے جب سی جے آئی نے ڈریس کوڈ کو لے کر بات کی،تینوں جج کوٹ اور گاؤن نہیں پہنے ہوئے تھے۔25 مارچ کو لاک ڈاؤن کے بعد سے ہی سپریم کورٹ ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے کیس سن رہا ہے۔