غالب پر تحقیق کے بہت سے امکانات اب بھی موجود،غالب انسٹی ٹیوٹ کے زیراہتمام بین الاقوامی وبینارمیں مقررین کا اظہارِ خیال

نئی دہلی:غالب انسٹی ٹیوٹ کے زیراہتمام یک روزہ بین الاقوامی سمینار کاانعقادہوا۔افتتاحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے پروفیسر شریف حسین قاسمی نے کہاکہ غالب انسٹی ٹیوٹ مبارکباد کا مستحق ہے کہ اس نے اس اہم موضوع پر بین الاقوامی سطح پر وبینار منعقد کیا۔ ظاہر ہے کہ کووڈ۔۱۹نے جوحالات پیدا کیے ہیں ان کے پیش نظر وبینار منعقد کرناپڑ رہاہے لیکن اس کاایک روشن پہلو یہ ہے کہ تمام مقالہ نگار حضرات منتخب روزگار ہیں اور ان کے ذریعے پیش کیے گئے مقالات بھی انسٹی ٹیوٹ شائع کرے گا۔ تعارفی کلمات ادا کرتے ہوئے غالب انسٹی ٹیوٹ کے ڈائرکٹر ڈاکٹر ادریس احمدنے کہاکہ اردو میں سب سے بہتر تحقیق کانمونہ غالب کے وسیلے سے سامنے آیالیکن اب بھی بہت سارے امکانات باقی ہیںجن کی طرف وہ حضرات توجہ کرسکتے ہیں جو اس وبینار میں شرکت کریں گے، لیکن جو حضرات آن لائن اس پروگرام کو دیکھ رہے ہیں اگران کے ذہن میں بھی اس قسم کے گوشے ہوں جن پر تحقیق ہونی چاہیے تو وہ بھی ہمیں اپنا مقالہ بھیج سکتے ہیں۔ہم ان کے مقالات کوبھی بشرط منظوری شائع کریں گے۔اس اجلاس میں پروفیسر معین الدین عقیل نے تحقیقات غالب: موجودہ اور مستقبل کے امکانات، پروفیسر نسیم احمدنے ’غالب کے اردو دیوان کی نئی ترتیب اور اس کے طریقۂ کار ایک اجمالی تعارف‘ ڈاکٹر شمس بدایونی نے ’تحقیق غالب کے موجودہ امکانات‘ اور جناب ثاقب فریدی نے ’نسخۂ حمیدیہ میں غالب کے مقطعے،ردیف بے سے نون تک‘ پیش کیے۔ دوسرا اجلاس دوپہر ڈھائی بجے سے شروع ہواجس کی صدارت کرتے ہوئے معروف محقق و دانشور جناب تحسین فراقی نے کہا’غالب تحقیق کے موجودہ امکانات‘ بہت اہم موضوع ہے لیکن اس موضوع پر وہی افراد اچھی گفتگو کرسکتے ہیں جن کے پیش نظر سابقہ تحقیقات ہوں، خوش نصیبی سے آج ہمارے وبینار میں تمام ایسے افراد جمع ہیں جنہوں نے غالبیات کوایک موضوع کے طور پر مستقل مزاجی سے بڑھاہے اور اس کے تعلق سے نہایت اہم نکات پیش کرچکے ہیں۔ غالب انسٹی ٹیوٹ اس موضوع اور مقالہ نگار حضرات کے انتخاب کے لیے مبارکباد کامستحق ہے۔ اس اجلاس میں پروفیسر شریف حسین قاسمی نے ’مہرنیم روز ایک تحقیقی جائزہ‘ ، پروفیسر انیس اشفاق نے ’غالب تحقیق کے موجودہ امکا نات ایک جائزہ‘ پروفیسر ناصر عباس نیر نے ’غالب تحقیق کے نئے امکانات‘ اور ’ڈاکٹر محمد ذاکر نے ’غالب اور معاصر اردوفرہنگ مخزن فوائد‘ کے موضوع پر پیش کیے۔ وبینار کے اختتام پر غالب انسٹی ٹیوٹ کے ڈائرکٹر ڈاکٹر ادریس احمد نے تمام صدور، مقالہ نگارحضرات اور شرکا کاشکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ آج کا وبینار بہت کامیاب رہا ہم عنقریب ان مقالات کو جلد ہی شائع کریں گے۔ مجھے یقین ہے کہ ان کی اشاعت سے غالب تحقیق کا رجحان بڑھے گا۔ میں تمام شرکا کا تہ دل سے شکرگزار ہوں۔