غازی آباد میں گئوکشی کاالزام،ایک شخص گرفتار

غازی آباد:اترپردیش کے ضلع غازی آباد کے مسوری علاقے میں اتوار کے روز ایک شخص کو گرفتار کیا گیا۔ اس پر گائے کے ذبیحہ کا الزام ہے۔غازی آباد کے پولیس سپرنٹنڈنٹ (دیہی) ایراج راجہ نے بتایاہے کہ 26 سالہ شانو نے اپنے ساتھی کے ساتھ پولیس ٹیم پر فائرنگ کردی اور جب پولیس نے جوابی کاروائی کی تو ایک گولی اس کی ٹانگ میں لگی۔انہوں نے بتایاہے کہ قاضی پورہ علاقے مسوری اور کاوی نگر پولیس تھانہ علاقے کی اونتیکا کالونی کے رہائشیوں نے جمعہ کے روز جانور کو دیکھا۔ اس کے بعدگئورکشکوں کی کچھ تنظیموں نے ہنگامہ برپا کردیا اور مجرموں کی گرفتاری اور ان کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔راجہ نے بتایاہے کہ خفیہ اطلاع کی بنیاد پر پولیس نے دو افراد کو گھیرے میں لیا ، جو مبینہ طور پر مسوری کے نہال گاؤں میں رجواہ نہرکے قریب گائے کے ذبح کرنے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔پولیس سپرنٹنڈنٹ نے بتایاہے کہ پولیس ٹیم پر دونوں نے فائرنگ کردی۔ جب پولیس اہلکاروں نے اپنے دفاع میں جوابی فائرنگ کی تو ایک گولی ملزم میں سے ایک کی ٹانگ میں لگی۔اس نے بتایا کہ اسے قریب ترین اسپتال لے جایا گیا ہے۔پولیس نے بتایا کہ زخمی شخص کی شناخت شانو کے نام سے ہوئی ہے۔ اس کا تعلق مسوری کے قصبہ ڈسنا سے ہے جبکہ اس کا ساتھی بلال موقع سے فرار ہوگیا ہے۔راجہ نے کہاہے کہ پولیس ان کے خلاف گینگسٹر ایکٹ ، کریمنل ایکٹ اور نیشنل سیکیورٹی ایکٹ (این ایس اے) کے تحت الزامات لگائے گی۔