گائے کی اسمگلنگ کو روکنے کے لیے ہریانہ حکومت ٹاسک فورس بنائے گی

چنڈی گڑھ:ہریانہ حکومت نے گائے کی اسمگلنگ اور ذبیحہ کو روکنے کے لیے خصوصی ٹاسک فورس (ایس ٹی ایف) کے قیام کافیصلہ کیاہے۔ریاستی وزیراعلیٰ منوہر لال کھٹر نے یہ ہدایات ہریانہ گئوسیواکمیشن کی میٹنگ کے دوران دیں۔ وزیراعلیٰ نے کمیشن کودی گرانٹ کی تفصیلات بھی پیش کیں۔ ہریانہ حکومت نے گایوں کی اسمگلنگ ،گائے کے ذبیحہ کوروکنے کے لیے خصوصی ٹاسک فورس تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ریاست کے وزیراعلیٰ منوہر لال کھٹر نے یہ ہدایات ہریانہ گئوسیواکمیشن کے میٹنگ کے دوران دیں۔وزیراعلیٰ منوہر لال نے متعلقہ عہدیداروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ گائے کی اسمگلنگ اور گائے کے ذبیحہ کو روکنے کے لیے ہرضلع میں 11 ممبروں پر مشتمل ایک خصوصی ٹاسک فورس تشکیل دیں۔ اس ٹیم میں سرکاری اور غیر سرکاری اہلکار شامل ہوںگے۔پولیس اہلکاروں کو محکمہ محکمہ بلدیاتی باڈیوں کے ساتھ ایس ٹی ایف میں بھی رکھا جائے گا۔ نیزہریانہ گئوسیوا کمیشن ، گئورکشک کمیٹی اور گئوسیوادل کوبھی ٹیم میں جگہ دی جائے گی۔وزیراعلیٰ نے کہاہے کہ اس ٹاسک فورس کا بنیادی مقصد گائے کی اسمگلنگ اور گائے کے ذبیحہ سے متعلق نچلی سطح پر لوگوں سے معلومات اکٹھا کرنا ہے۔ ان کا انٹیلیجنس نیٹ ورک پورے ہریانہ میں کام کرے گا۔ ان ٹیموں سے موصولہ مخصوص معلومات کی بنیاد پر پولیس فورس فوری کارروائی کرے گی اورایسی غیرقانونی سرگرمیوں کو روکا جائے