Home قومی خبریں روپیہ کی گراوٹ پر وزیر خزانہ کا عجیب بیان،سوشل میڈیا پر میمز کا سیلاب

روپیہ کی گراوٹ پر وزیر خزانہ کا عجیب بیان،سوشل میڈیا پر میمز کا سیلاب

by قندیل

نئی دہلی: ڈالر کے مقابلے روپیہ کی قدر میں لگاتار گراوٹ درج کی جا رہی ہے اور گراوٹ کے نئے ریکارڈ قائم ہو رہے ہیں۔ اس وقت ایک ڈالر کی قیمت 82 روپے 42 پیسے تک پہنچ گئی ہے۔ اس صورت حال کو قبول کرنے اور اس کی بہتری کے لیے اقدامات کرنے کے بجائے مرکز کی مودی حکومت اس حالت زار کو فائدہ مند قرار دینے کی کوشش کر رہی ہے۔ اس طرح کا ایک بیان مرکزی وزیر خزانہ نرملا سیتارن نے دیا ہے، جس میں انہوں نے روپیہ کی قدر میں کمی پر عجیب و غریب دلیل دی ہے۔مرکزی وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن اپنے امریکہ کے سرکاری دورے کے دوران واشنگٹن ڈی سی میں میڈیا سے خطاب کر رہی تھیں، اس دوران جب ان سے روپیہ کی حالت زار کے بارے میں پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ روپیہ کی قدر نہیں گر رہی ہے بلکہ اسے ہمیں اس طرح دیکھنا چاہیے کہ ڈالر کو مضبوط ہو رہا ہے۔ لیکن اگر آپ مارکیٹ کی دیگر کرنسیوں کو دیکھیں تو روپیہ کی کارکردگی ڈالر کے مقابلے کافی بہتر ہے۔وزیر خزانہ کے اس بیان کے ردعمل میں سوشل میڈیا پر میمز کا سیلاب آگیا ہے اور لوگ اپنے اپنے طورپر ان کے اس بیان کو پیش کر رہے ہیں۔ واضح رہے کہ روپیہ کی مسلسل گراوٹ سے ہندوستان کی مشکلات میں اضافہ ہوا ہے اور کئی علاقوں میں اس کا اثر نظر آ رہا ہے۔ تیل کی قیمتوں سے لے کر روزمرہ استعمال کی اشیاکی قیمتوں میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ روپیہ کی گراوٹ ہندوستان اس حوالہ سے بھی بڑی پریشانی کا باعث ہے کہ ملک بہت سی ادویات بشمول ضروری تیل، برقی سامان اور مشینریز درآمد کرتا ہے۔ اگر روپیہ کی قدر اسی طرح گرتی رہی تو درآمدات مزید مہنگی ہو جائیں گی اور آپ کو زیادہ خرچ کرنا پڑے گا۔

You may also like

Leave a Comment