فاشزم کیخلاف پورا ملک اٹھ کھڑا ہواہے،اب تم ہمیں روک نہیں سکتے:اروندھتی رائے

 

ملک بھر میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف چل رہے زبردست احتجاجات کے دوران آج عالمی شہرت یافتہ مصنفہ و سماجی کارکن اروندھتی رائے نے ایک بیان جاری کرکے کہاہے کہ”اب ہندوستان اٹھ کھڑا ہواہے اور موجودہ حکومت پوری طرح ایکسپوژہوچکی ہے،اس کی معتبریت ختم ہوچکی ہے“۔انھوں نے آگے کہاہے کہ آج محبت و یکجہتی کے جذبات نے نفرت و فاشزم کو مات دے دی ہے۔ہرشخص کو غیر دستوری شہریت ترمیمی قانون کے خلاف احتجاجات کے لیے باہر نکلنا چاہیے۔ہم یعنی اس ملک کے دلت، مسلم، ہندو، عیسائی، سکھ، آدی واسی،مارکس وادی، امبیڈکروادی، کسان، مزدور، اکیڈمکس، لکھاری، شاعر، پینٹر اورخاص کر طلبا ہی اس ملک کا مستقبل ہیں۔انھوں نے حکومت کو مخاطب کرتے ہوئے کہاہے کہ”اب تم ہمیں روک نہیں سکتے“۔قابل ذکرہے کہ شہریت ترمیمی قانون پاس ہونے کے بعد سے مسلسل پورے ملک میں احتجاج جاری ہے۔گزشتہ16دسمبر کو دہلی کے جامعہ ملیہ اسلامیہ اور علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں ہونے والے احتجاج پر پولیس کریک ڈاؤن کے بعد ہندوستان سمیت دنیابھر کے اہل علم و دانش کے طبقے میں شدید بے چینی پیدا ہوگئی ہے اور دس ہزار سے زائد اہل علم و دانش،قلم کار،ادباوشعرانے جامعہ و اے ایم یوسانحے کی مذمت کرتے ہوئے شہریت ترمیمی قانون کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیاہے۔