الیکشن کمیشن کا حکم:داغدار اور بدعنوان افسران انتخابی ڈیوٹی میں نہیں ہوں گے

پٹنہ:آزادانہ اور منصفانہ اسمبلی انتخابات کے دعوے کے ساتھ الیکشن کمیشن نے ایک ضلع میں 3 سال مکمل کرنے والے افسران کے تبادلہ کی ہدایت کی ہے۔ کمیشن نے اس کے لیے 31 اکتوبر تک کٹ آف تاریخ طے کی ہے۔ اس رینج میں آئی جی ، ڈی آئی جی، ڈی ایم ، ایس ایس پی ، ایس پی ، کمانڈنٹ ، اے ایس پی ، اے ڈی ایم ، ایس ڈی ایم ، ڈپٹی کلکٹر،جوائنٹ کلکٹر،تحصیلدار،انسپکٹر ، سب انسپکٹر اور سارجنٹ میجر سطح کے افسران شامل ہوں گے۔کمیشن نے چیف سکریٹری اورچیف الیکٹورل آفیسر کو جاری ایک خط میں کہا ہے کہ جن افسران کے خلاف الیکشن کمیشن نے گذشتہ انتخابات میں تادیبی کارروائی کی سفارش کی ہے یا ان کے خلاف کوئی جرمانہ عائد کیا گیا ہے ، وہ ڈیوٹی پرنہیں ہوں گے۔ تاہم افسران کوبھی انتخابی کاموں سے دور رکھا جائے گا ، جن پر الزام ہے کہ انہوں نے پچھلے انتخابات میں رکاوٹ ڈالی ہے۔ ریٹائرمنٹ میں چھ ماہ باقی رہنے والے افسران کو اس سے خارج کردیاجائے گا۔اس کے علاوہ ٹرانسفر پوسٹنگ کا یہ حکم ان پولیس افسران پربھی لاگونہیں ہوگاجوکمپیوٹرائزیشن یا خصوصی برانچ اور تربیت میں تعینات ہیں۔ ایک افسر میں 3 سال کی مدت مکمل کرنے والے افسران دوسرے ضلع میں تعینات ہوں گے۔ کمیشن نے یہ بھی کہا ہے کہ پچھلے لوک سبھا انتخابات میں کمیشن کی سفارش پرجوافسران تعینات ہیں ، ان کو اس پالیسی سے الگ رکھاجائے گا۔