ای سی سی ای کی سرگرمیاں گھروں میں رہنے والے بچوں کی صحت اور تعلیم میں مدد کررہی ہیں

 

پٹنہ : کورونا انفیکشن کے بڑھتے معاملات کی روک تھام ملک کے ساتھ ریاست کے لئے بھی چیلنجنگ ثابت ہورہے ہیں۔ اس وبا میں، سرکاری محکمہ ہر سطح پر امدادی اور بچاؤ کے کاموں میں مصروف ہے۔ کورونا انفیکشن کی وجہ سے اسکول اور آنگن باڑی مراکز بھی ایک طویل عرصے سے بند ہیں، جس کی وجہ سے بچے اسکول نہیں جاپارہے ہیں۔ ایسی صورتحال میں، آئی سی ڈی ایس کے زیر اہتمام چلنے والا ابتدائی بچپن کی دیکھ بھال اور تعلیم (ای سی سی ای) پروگرام اپنے گھر میں بچوں کی صحت اور تعلیم کا خیال رکھے ہوئے ہے۔ اس پروگرام کا بنیادی مقصد بچوں کی روزمرہ کی سرگرمیوں کو تخلیقی بنانا ہے۔ آنگن باڑی مراکز میں بچے نہ جانے کی صورت میں، آنگن باڑی کارکن گھر گھر جاکر انہیں ای سی سی ای کی سرگرمیوں سے آگاہ کررہی ہیں۔

بچے ایک مس کال پر دادی ،نانی کی کہانیاں سن رہے ہیں:کورونا بحران کے دوران چھوٹے بچوں کو نفسیاتی، معاشرتی مدد فراہم کرنے کے لئے ایک اچھی کوشش کی گئی ہے۔ یہ کوشش آئی سی ڈی ایس-یونیسف اور پرتھم بکس کے تحت کی گئی ہے۔ـ”مس کال دو کہانیاں سنو”سر گرمی کے تحت ایک فون نمبر 08033094243 دستیاب کرایا گیا ہے، جس سے طلبا صرف ایک مس کال دے کر اپنی عمر کے مطابق کہانیوں سے لطف اندوز ہوسکتے ہیں ۔ یہ کہانی دادی ،نانی کے ساتھ بالی ووڈ کی مشہور شخصیات کی آواز میں بھی ہے۔ اس کا بنیادی مقصد بچوں میں پڑھنے اور سننے کا ماحول تیار کرنا ہے۔ کورونا بحران کی وجہ سے اسکول بند ہیں۔ اس صورتحال میں چھوٹے بچوں کے ذہنوں میں کئی قسم کے سوالات پیدا ہوتے ہیں۔ ان کہانیوں کے ذریعے بچوں کو نفسیاتی ،معاشرتی مدد دینے کی کوشش کی جارہی ہے۔

مائوںکوسرگرمی کیلنڈر سے آگاہ کیا جارہا ہے:بچوں کو روز مرہ کا بہتر معمول فراہم کرنے اور انہیں تخلیقی کاموں میں مشغول کرنے کے لئے، ایک سرگرمی کیلنڈر جاری کیا گیا ہے اور آئی سی ڈی ایس کے تمام ضلعی پروگرام آفیسرز کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اس کیلنڈر کو تمام خواتین سپروائزر اور آنگن باڑی کارکنوں کو واٹس ایپ اور دیگر الیکٹرانک ذرائع کے ذریعہ بھیجیں۔ تاکہ آنگن باڑی کارکنان گھر وںکے دورے کے دوران بچوں کے والدین کو روزانہ کی سرگرمی کیلنڈر کے بارے میں آگاہ کرسکیں اور والدین آسانی سے اپنے گھروں میں بچوں کے ساتھ سرگرمی کرسکیں۔

تفریح کے ساتھ تعلیم:آئی سی ڈی ایس کے ایڈیشنل چیف سکریٹری اتل پرساد نے بتایا کہ کورونا منتقلی کی مدت کے دوران ای سی سی ای کی سرگرمیوں کی افادیت میں اضافہ ہوا ہے۔ آنگن باڑی سنٹر بند ہونے کی وجہ سے بچے گھر پر موجود ہیں۔ ایسی صورتحال میں، یہ ضروری ہے کہ بچوں کو کھیلوں کے ذریعہ تعلیم جاری رکھی جائے اور گھر میں ہی ان کی بنیادی دیکھ بھال کو یقینی بنایا جاسکے۔ ای سی سی ای کیلنڈر اس سمت میں بہت کارآمد ثابت ہورہا ہے۔ اس میں بچوں کے لئے پورے مہینے میں مختلف سرگرمیوں پر تبادلہ خیال کیا جاتا ہے۔ اس کے ساتھ، بچے تفریح کے ساتھ پڑھیں گے ۔

ان چیزوں کو روزانہ کے کیلنڈر میں شامل کیا گیا ہے:یومیہ سرگرمی کا کیلنڈر یونیسف اور آئی سی ڈی ایس بہار کے مشترکہ تعاون سے تشکیل دیا گیا ہے۔ کیلنڈر میں تفریحی، حفظان صحت اور بچوں کے لئے معمول کے مطابق کھیلوں جیسی سرگرمیاں شامل ہیں۔ اس وبا کے دوران بچے ذہنی طور پر پریشان ہو سکتے ہیں۔ لہٰذا والدین کے لئے یہ بہت ضروری ہے کہ وہ بچوں سے بات کرنے کے لئے مثبت رویہ اپنائیں۔ والدین اور دیکھ بھال کرنے والے اس میں اہم کردار ادا کرسکتے ہیں۔ روزانہ کیلنڈر میں باقاعدگی سے ورزش، کھیل، ڈرائنگ، کہانی، گانا گانے اور رول پلے جیسی سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے تاکہ بچے یہ محسوس کرسکیں کہ وہ محفوظ اور دوستانہ ماحول میں ہیں۔

ٹول فری نمبرپر معلومات حاصل کریں:آئی سی ڈی ایس ڈائریکٹوریٹ نے عام لوگوں کو غذائیت اور ابتدائی بچپن کی دیکھ بھال اور تعلیم سے آگاہ کرنے کے لئے ایک ہیلپ لائن نمبر جاری کیا ہے۔ کوئی بھی ٹول فری نمبر 18001215725 پر فون کرسکتا ہے اور گھر میں غذائیت اور ابتدائی بچپن کی دیکھ بھال اور تعلیم (ای سی سی ای) سے متعلق معلومات حاصل کرسکتا ہے۔ اس ٹول فری نمبر کو غذائیت سے متعلق عوامی آگاہی کے لئے جاری کیا گیا ہے۔ اس مفت ہیلپ لائن نمبر سے، بچوں، حاملہ اور دودھ پلانے والی ماؤں، نوعمر لڑکیوں سمیت پورے کنبہ کی تغذیہ سے متعلق معلومات حاصل کی جاسکتی ہیں۔ نیز اس ہیلپ لائن پر جو بچوں کی زندگی میں ابتدائی سالوں کی اہمیت، بچوں کی دماغی نشوونما کو متاثر کرنے والے عمل اور عوامل، ابتدائی بچپن کی دیکھ بھال اور تعلیم کے تصور اور اہمیت اور 3-6 سال کی عمر میں بچوں کی نشوونما اور نشوونما سے متعلق ہر معلومات دستیاب ہے۔