دو ماہ بعد پبلک ٹرانسپورٹ بحال

نئی دہلی:دہلی میں تقریباًدو ماہ بعد پبلک ٹرانسپورٹ خدمات منگل کو شروع ہو گئی۔سڑکوں پر بسیں، آٹو اور ٹیکسیاں چل رہی ہیں، لیکن محدود تعداد میں لوگ ان میں سفر کر رہے ہیں۔کورونا وائرس کی وجہ سے نافذ لاک ڈاؤن کے پیش نظر پبلک ٹرانسپورٹ کو بند کر دیا گیا تھا۔دہلی ٹرانسپورٹ کارپوریشن (ڈی ٹی سی) اور کلسٹر بس سروس شروع ہو گئی ہے اور کوروناوائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لئے سوشل فاصلے کے قوانین سینیٹائزر کا استعمال اور ماسک جیسے حفاظتی اقدامات کو نافذکیا گیا ہے۔محکمہ ٹرانسپورٹ کے ایک سینئر افسر نے بتایاکہ ہم جتنا ممکن ہو رہا ہے اتنی زیادہ بسیں چلانے کی کوشش کر رہے ہیں اور کچھ ڈرائیور قومی دارالحکومت دہلی سے باہر شہروں میں رہتے ہیں، اس لیے انہیں ڈیوٹی میں آنے میں پریشانی ہو رہی ہے۔آنے والے دنوں میں صورتحال بہتر ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ صبح میں بس سروس بحال کرنے کے بعد سے کوئی پریشانی نہیں آئی۔ حالانکہ کچھ علاقوں میں لوگوں کو طویل وقت تک انتظار کرنا پڑا۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے پیر کو پابندیوں میں نرمی کا اعلان کیا تھا، جن میں سماجی فاصلے پر عمل کرتے ہوئے پبلک ٹرانسپورٹ کو کھولنا شامل تھا۔ حالانکہ لاک ڈاؤن 31 مئی تک کے لئے بڑھا دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا تھاکہ ایک بس میں 20 سواریوں کو سفر کرنے کی اجازت ہو گی۔محکمہ ٹرانسپورٹ کی ذمہ داری ہوگی کہ وہ سفر کے دوران اور بس اسٹاپ پر سماجی فاصلے کے اصول کی پیروی کرائے۔