شمال مشرقی دہلی میونسپل کارپوریشن کے ڈاکٹروں اور صحت اہلکاروں کو نہیں مل رہی ہے تنخواہ،وزیراعظم کو لکھا خط

نئی دہلی:شمال مشرقی دہلی میونسپل کارپوریشن کے تحت آنے والے صحت اہلکار، ڈاکٹرس، نرسنگ طبی کے عملے کو تقریبا 3 ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ہے،جس کی وجہ سے ان کو گھر چلانے میں بھی دقت ہو رہی ہے۔صحت اہلکار انتہائی ہی پریشان ہیں۔ایک طرف کورونا وائرس کے اس مشکل وقت میں وہ اپنی جان خطرے میں ڈال کر مریضوں کا علاج کر رہے ہیں وہیں حکومت ان تک ان کی تنخواہ پہنچانے میں بھی قابل نہیں ہے۔اس دوران ڈاکٹر ماروتی سنہا نے بتایاکہ ہمیں 3 ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ہے،جس کی وجہ سے گھر چلانا بہت مشکل ہو رہا ہے،ہم اپنی ای ایم آئی، بچوں کی اسکول فیس نہیں دے پا رہے ہیں،ہم نے وزیر اعظم کو خط لکھا لیکن ابھی تک ہمیں ہمارا بقایہ نہیں ملا ہے۔ایسا لگ رہا ہے کہ کورونا کے وقت میں جہاں ہم مریضوں کو ٹھیک کرنے میں جان لگا دے رہے ہیں تو وہیں دوسری طرف کسی کو ہماری یا ہمارے خاندانوں کی فکر نہیں ہے۔ڈاکٹروں کے ساتھ ساتھ نرس اور باقی طبی عملے کے لئے بھی یہ مشکل وقت ہے۔نرس یونین کی جنرل سکریٹری نے بتایاکہ ہمیں یہاں گزشتہ 3 ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ہے۔ڈاکٹر، نرس، میڈیکل، پیرامیڈیکل، کسی بھی عملے کو تقریبا 3 ماہ کی تنخواہ نہیں ملی ہے۔شمال مشرقی میونسپل کے تحت آنے والے تمام صحت کے اہلکاروں، ڈاکٹرس کی تنخواہ کی پریشانی کا جب دہلی میڈیکل ایسوسی ایشن کو نوٹس ہوا تو ایسوسی ایشن نے وزیر اعظم نریندر مودی، دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال، مرکزی وزیر صحت ہرش وردھن کو خط لکھ کر اس معاملے میں جلد سے جلد مداخلت کرنے کو کہا۔شمال مشرقی دہلی میونسپل کارپوریشن کے میئر اوتار سنگھ سے جب پوچھا گیا کہ باقی دونوں میونسپل کارپوریشن میں تو ملازمین کو تنخواہ مل رہی ہے، تو انہوں نے کہا کہ باقی دونوں میونسپل کارپوریشن میں آمدنی زیادہ ہوتی ہے ہمارے یہاں اتنی آمدنی نہیں ہوتی ہے،ساتھ ہی جب ہم فنڈ مانگتے ہیں دہلی حکومت سے تو ہمیں پیسہ نہیں ملتا ہے۔