ایودھیا:دھنی پور میں مسجد کے لیے مختص اراضی کے مالکانہ حق کولے کردائر درخواست خارج

لکھنؤ:الہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ نے پیر کو ایودھیا کے دھنی پور میں مسجد کی تعمیر کے لیے مختص اراضی کی ملکیت کے لیے دائر درخواست کو خارج کردیا۔ درخواست گزار کے وکیل نے درخواست واپس لینے کی درخواست کی تھی۔یہ حکم پیر کو جسٹس دیویندر کمار اپادھیائے اور جسٹس منیش کمار کی ڈویژن بنچ نے منظور کیا۔ سماعت کے دوران حکومت کی جانب سے ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل رمیش کمار سنگھ نے اس درخواست کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دھنی پور میں مسجد کے لیے مختص کی گئی کھاتہ نمبر (محکمہ آمدنی کے ذریعہ دی گئی) درخواست میں مذکور نمبر سے مختلف ہے اس لئے پٹیشن میں غلط حقائق ہیں اور یہ مسترد ہونے کے لائق ہے۔اس درخواست پر درخواست گزار کے وکیل ایچ جی ایس پریہار نے اپنی غلطی قبول کرتے ہوئے درخواست واپس لینے کی درخواست کی۔ اس پربنچ نے درخواست خارج کردی۔ قابل ذکر ہے کہ الہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ میں دہلی کی دو خواتین، رانی کپور پنجابی اور راما رانی پنجابی نے ایک عرضی داخل کی تھی اور مسجد کے لیے دی گئی پانچ ایکڑ اراضی کو اپنی ملکیت قرار دیا تھا۔