دہلی پولیس کے 75 سے زائد جوان کورونا سے متاثر، حکام نے احتیاط برتنے کی دی ہدایت

نئی دہلی:دہلی پولیس کے 75 سے زیادہ جوان کورونا وائرس سے متاثر پائے گئے ہیں۔ اس میں سپاہی سے لے کر انسپکٹر رینک تک کے افسران شامل ہیں۔ دہلی پولیس نے اپنے اہلکاروں کو دہلی سے باہر نہ بھیجنے کے لئے اب دہلی حکومت کی کئی عمارتوں کا سہارا لیا ہے۔پولیس کے ایک اعلی افسر نے بتایا کہ دہلی پولیس اہلکار پوری دہلی میں مختلف جگہوں پر تعینات ہیں۔ ڈیوٹی کے دوران وہ کئی بار کورونا سے متاثر افراد کے رابطہ آ رہے ہیں۔ ایسا ہی تبلیغی جماعت کے معاملے میں بھی ہوا۔ جب کرائم برانچ کی ٹیم نے تبلیغی جماعت کے مرکز میں اندر جاکر تلاشی لی اور اس کے لوگوں سے پوچھ گچھ کی۔ اس دوران پریشانی ہونے پر کرائم برانچ کی مذکورہ ٹیم کا کورونا ٹیسٹ کرایا گیا۔ افسر نے بتایا کہ اس دوران کرائم برانچ کی ٹیم کے 5 اہلکار کورونا مثبت نکلے۔ جنہیں جھجھر میں داخل کرایا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ٹیم کے 15 دیگر اہلکاروں کو کووانٹین میں بھیج دیا گیا ہے۔افسر نے بتایا کہ اس کے علاوہ دہلی پولیس کی اسپیشل سیل جہاں دہلی فسادات سے متعلق معاملات کی جانچ چل رہی ہے وہاں بھی پولیس اہلکار مثبت پائے گئے۔ اس کے علاوہ دہلی کے مختلف تھانوں میں تعینات پولیس اہلکار کورونا مثبت پائے گئے۔ افسر نے بتایا کہ آج صبح کی تازہ رپورٹ کے مطابق دہلی پولیس کے تقریبا 75 پولیس اہلکار کورونا مثبت پائے گئے ہیں۔دہلی پولیس کے سربراہ ایس این شریواستو نے پولیس اہلکاروں میں بڑھتے ہوئے معاملے کو دیکھتے ہوئے دہلی حکومت کے کئی اسکولوں کو دہلی پولیس اہلکاروں کے رہنے کے لئے لیا ہے کیونکہ دیکھا جا رہا تھا کہ دہلی پولیس اہلکار ڈیوٹی کے بعد واپس اپنے گھروں کو جاتے ہیں۔ ان میں سے کئی لوگوں کا گھر بہت دور ہے اور کئی بار انہیں سرحد بھی پار کرنی پڑتی ہے۔ قومی دارالحکومت علاقہ کی سرحد سیل ہونے کے بعد پولیس اہلکاروں کو باہر جانے کی پریشانی بھی ہو رہی تھی۔ ایسے میں ان پولیس اہلکاروں کے رہنے کے لئے دہلی پولیس نے اسکول کی عمارتوں کو لیا ہے۔