دہلی میں تعمیر ہوگا دنیا کا پہلا ورچوئل ماڈل اسکول ، کہیں سے بھی اٹھا سکیں گے فائدہ

نئی دہلی:دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے آج دہلی قانون ساز اسمبلی میں پہلا ای بجٹ پیش کیا۔ اس دوران منیش سسودیا نے ایک بڑا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ورچوئل ماڈل اسکول دہلی میں شروع کیا جائے گا ، جس کا فائدہ دنیا میں رہنے والا کوئی بھی شخص اٹھاسکتا ہے۔اس سلسلے میں مزید معلومات دیتے ہوئے نائب وزیر اعلی نے کہا کہ ورچوئل ماڈل اسکول دہلی میں شروع کیا جائے گا۔ یہ دنیا میں اپنی نوعیت کا پہلا اسکول ہوگا ، جہاں کوئی چہار دیواری نہیں ہوگی اور کوئی بھی شخص دنیا میں کہیں بھی رہ کر دہلی کے تعلیمی ماڈل کا فائدہ اٹھا سکتا ہے ۔ ایسے اسکول کے ڈیزائن کا کام شروع ہوچکا ہے۔ واضح رہے کہ مالی سال 2021-22 کے لئے منیش سسودیا نے 69 ہزار کروڑ کا بجٹ پیش کیا ، جو گزشتہ کے مقابلے 4 ہزار کروڑ زیادہ ہے۔ سسودیا نے کہا کہ آزادی کے 75 سال مکمل ہونے کے موقع پر دہلی میں حب الوطنی کا کورس شروع کیا جائے گا ، تاکہ ہر بچہ محب وطن بن سکے ۔ ہر تعلیم یافتہ شخص خواتین کا احترام کرے ، اور اسکولوں میں حب الوطنی تیار کی جائے گی۔ تعلیم کو ایک عوامی تحریک بنانے کی ضرورت ہے۔ تعلیم یافتہ اور کامیاب نوجوانوں کو ان طلبہ کی مدد کرنے کے لیے کہیں گے جو بچے وسائل کی کمی سے پریشان ہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے مزید کہا کہ دہلی میں نیا فوجی اسکول کھولا جائے گا ، اس وقت دہلی میں کوئی فوجی اسکول نہیں ہے۔ دہلی کے بچوں کو این ڈی اے کے لئے تیار کریں گے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ اسپتالوں میں مفت کورونا ویکسین لگتی رہے گی۔