دہلی کا اپنا تعلیمی بورڈہوگا:اروند کجریوال

نئی دہلی: دیگرریاستوں کی طرح قومی دارالحکومت دہلی میں بھی اب اپنا اپنا تعلیمی بورڈہوگا۔ دہلی کے وزیراعلیٰ اروندکجریوال نے آج ایک پریس کانفرنس میں اس کا اعلان کیاہے۔ انہوں نے بتایاہے کہ دہلی کابینہ نے نیا تعلیمی بورڈ تشکیل دینے کے فیصلے کومنظوری دے دی ہے۔ اس وقت دہلی میں صرف سی بی ایس ای / آئی سی ایس ای بورڈ موجود ہیں۔ کجریوال نے کہاہے کہ تعلیمی سیشن 2021-22 میں نئے بورڈکے تحت کچھ اسکولوں میں تعلیم کا آغاز ہوگا۔ کجریوال نے کہاہے کہ دہلی کے سرکاری اسکولوں میں ایک کمپلیکس ہوتا تھا ، لیکن جب ہم نے تعلیم پر بجٹ کا 25فی صدخرچ کرنا شروع کیا تو تبدیلیاں رونما ہوئیں۔انہوں نے کہا ہے کہ ہم نے انفراسٹرکچر میں بہتری لائی ہے اور اساتذہ کو بیرون ملک ٹریننگ کے لیے بھیجاہے۔ہم نے اپنے طلباء کو بیرون ملک بھیجنا شروع کیا اور انھیں اولمپیاڈ آف فزکس ، کیمسٹری کے لیے بیرون ملک بھیجا۔ ہماری دہلی کے بچے متعدد جگہوں پر میڈل جیت کر واپس آئے ہیں۔کجریوال نے کہاہے کہ ہم نے اپنے پرنسپل کو بااختیار بنایا ، اب تک ہراسکول میں ڈائریکٹوریٹ آف ایجوکیشن بہت دخل اندازی کرتا تھا۔ چھوٹی چھوٹی چیزوں کو ڈائریکٹوریٹ سے منظور ہوناتھالیکن اب ہم نے پرنسپل کو اختیار دیا اور 5000 تک خرچ کرنے کا حق اسے بڑھا کر 50000 ڈالر کردیا گیاہے۔کجریوال نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ ہمارے اسکولوں میں کیا پڑھایا جارہا ہے اور کیوں پڑھایا جارہا ہے۔ ہمارے تین مقاصد ہیں جو یہ نیا بورڈ پورا کرے گا ہمیں ایسے بچوں کو تیار کرنا ہے جو کٹر محب وطن ہوں۔ ایسے بچوں کو تیار کرنا ہے ، جو آنے والے وقت میں کسی بھی علاقے سے قطع نظر ملک کے ہر شعبے میں ذمہ داری قبول کرنے کے لیے تیار ہیں۔ہمارے بچے اچھے لوگ ہوں ، خواہ کسی مذہب یا ذات پات کے ہوں ، امیر اور غریب۔ ہر ایک کو ایک دوسرے کو انسان سمجھنا چاہیے۔ ایک طرف اپنے کنبہ کی دیکھ بھال کریں اور دوسری طرف معاشرے پر بھی دھیان دیں۔