بہار کے دربھنگہ میں پارسل دھماکہ معاملہ:این آئی کا حیدرآباد سے دو دہشت گرد گرفتارکرنے کادعویٰ

حیدرآباد: پولیس کے دعویٰ کے مطابق دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ ہندوستان کو دہلانے کی سازش کررہی ہے، لیکن آج اس سازش کا پردہ فاش ہو گیا ۔ بہار کے دربھنگہ میں پارسل دھماکے کیس میں آج دو دہشت گردوں کو حیدرآباد سے گرفتار کیا گیا تھا۔ دونوں دہشت گردوں کو قومی تفتیشی ایجنسی (این آئی اے) نے گرفتار کیا ہے۔ تفتیش کے دوران ان دہشت گردوں نے کہا ہے کہ وہ لشکر کے کہنے پر ہندوستان میں دہشت گردی کی سازشیں کر رہے تھے۔17 جون کو بہار کے دربھنگہ ریلوے اسٹیشن پر ایک دھماکہ ہواتھا۔ ابھی تک کسی کے زخمی ہونے کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ یہ دھماکا ٹرین کی پارسل وین سے اسٹور سائٹ کپڑے کا بنڈل لے کر جارہا تھا۔ یہ پارسل سکندرآباد سے آنے والی ٹرین سے آیا تھا اور دھماکے کے بعد کپڑے کے بنڈل میں آگ لگی۔دربھنگہ میں جس پارسل میں دھماکا ہوا اس کو حیدرآباد سے سفیان نامی شخص نے بھیجا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ یہ شخص جعلی ہے، کیونکہ دربھنگہ میں یہ پارسل سفیان نامی شخص کے پاس بھیجا گیا تھا۔ ساتھ ہی اس پر دیے گئے نمبر بہار اور حیدرآباد میں کسی کے نام پر رجسٹرڈ نہیں ہیں۔ پولیس کی معلومات کے مطابق پارسل کے ساتھ دیا گیا نمبر اترپردیش کے شاملی کا ہے