درخت پراسکرین کی تصویروائرل،ٹوئٹرصارفین کابی جے پی پرغصہ پھوٹا

نئی دہلی:وزیر داخلہ امت شاہ نے مغربی بنگال میں ایک ورچوئل ریلی کی تھی۔ ان کی تقریر نشر کرنے کے لیے ریاست بھر میں ہزاروں ایل ای ڈی اسکرینیں لگائی گئیں۔ اب ان کی ایک تصویرسامنے آگئی ہے ، جس کی ٹویٹر پر چرچاکی جارہی ہے۔ بنگال کے ایک دور دراز علاقے کی اس تصویر میں ، ایل ای ڈی ٹی وی بانس کے درختوں پرہے ، جس کے سامنے کچھ بچوں سمیت کچھ لوگ تقریرسنتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔ جب مغربی بنگال ابھی تک طوفان امفان پرقابونہیں پایاگیا ہے اور پورا ملک کوروناوائرس کی زبردست گرفت میں ہے ، تو اس تصویر پر ٹوئٹر پرسخت ردعمل مل رہا ہے۔پارٹی ذرائع نے انکشاف کیاہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی نے مغربی بنگال میں اگلے سال ہونے والے اسمبلی انتخابات کے پیش نظر منگل کے روزامت شاہ کی ورچوئل ریلی کے لیے ریاست بھر میں لگ بھگ 70000فلیٹ اسکرین ٹی وی اور15000 بڑی ایل ای ڈی اسکرینیں لگائی تھیں۔ ایک اندازے کے مطابق ریاست میں 78000 پولنگ بوتھ ہیں۔بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری بی ایل سنتوش نے اس تصویر کو شیئر کرتے ہوئے لکھا ہے کہ بنگال کے دور دراز علاقوں میں لوگ امت شاہ کوسن رہے ہیں۔ یہ پچھلے پانچ سالوں سے بی جے پی کی کوششوں کا نتیجہ ہے۔ لوگ اچھے دن چاہتے ہیں۔لیکن حزب اختلاف ہی نہیں ، ٹویٹرصارفین نے بھی اس تصویر پر سوالات اٹھائے ہیں۔ اتر پردیش کانگریس کے لیڈرراکیش سچن نے ایک ٹویٹ میں کہاہے کہ بی جے پی کورونا وائرس سے متاثرہ غریبوں اور مزدوروں کو ساڑھے سات ہزار روپیہ نہیں بھیج سکتی ہے یا انہیں گھر نہیں پہنچاسکتی ہے لیکن وہ انتخابی مہم کے لیے سب کچھ کرے گی۔ایک اورصارف نے لکھا،جہاں نہ پہونچ سکے راشن وہاں بھی پہونچادیابھاشن۔ایک اورصارف نے لکھا،بانس کے پیڑپرلٹکتاوکاس۔اس طرح بڑی تعدادمیں لوگ ناراضگی کااظہارکررہے ہیں۔