دہشت گردی کے ملزم سابق ڈی ایس پی دویندرسنگھ کی ضمانت منظور

نئی دہلی:جموں و کشمیر کے معطل ڈی ایس پی دویندر سنگھ ،جو اس سال کے شروع میں سرینگر جموں شاہراہ پر ایک گاڑی میں حزب المجاہدین کے دو دہشت گردوں کو بھگانے کے دوران گرفتارہوا تھا ، دہلی کی ایک عدالت نے جمعہ کے روز اس کی ضمانت منظور کرلی۔سنگھ اور اس معاملے کے ایک اور ملزم عرفان شفیع میر کو دہلی پولیس کے خصوصی سیل کے ذریعہ دائر ایک مقدمے میں عدالت نے یہ ریلیف دی ہے۔اس کے وکیل ایم ایس خان کے مطابق عدالت نے یہ تبصرہ بھی کیا کہ تحقیقاتی ایجنسی اس کی گرفتاری کے بعدقانون کے مطابق 90 دن کے اندر چارج شیٹ داخل کرنے میں ناکام رہی۔ضمانت ایک لاکھ روپے کے ذاتی مچلکے اور اسی طرح کی دو ضمانتوں پر دی گئی ہے۔قابل ذکر ہے کہ جموں و کشمیر کے معطل ڈی ایس پی پر کئی سنگین الزامات ہیں اور ان کا ماضی کا ریکارڈ بھی بدعنوانیوں اور سازشوں میں شرکت کا رہاہے۔۲۰۰۱میں ہونے والے پارلیمنٹ حملے میں بھی ان کا رول تھا اوراس کا انکشاف افضل گرو کے خط سے ہوا تھا،جو انھوں نے۲۰۱۳ میں لکھا تھا مگر اس وقت کی حکومت نے اس سلسلے میں چھان بین کی ضرورت محسوس نہیں کی تھی۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*