کورونا وائرس:سعودی عرب نے آج سے ہندوستان سمیت 20 ملکوں پر سفری پابندی عائد کردی

ریاض:سعودی عرب نے بدھ تین فروری سے نئے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے پاکستان سمیت بیس ملکوں پر عارضی سفری پابندی لگانے کا اعلان کیا ہے۔ سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ سعودیوں، سفارت کاروں، صحت کارکنان اور ان کے اہل خانہ کے سوا تمام افراد کے سعودی عرب آنے پر عارضی پابندی لگا دی گئی ہے۔یہ پابندی 20 ممالک سے آنے والے مسافروں پر عائد کی گئی ہے۔ ان میں پاکستان، انڈیا، متحدہ عرب امارات اور دیگر ممالک شامل ہیں۔ سعودی وزارت داخلہ نے منگل کو بیان میں کہا ہے کہ سعودی شہریوں، سفارت کاروں، طبی کارکنان اور ان کے اہل و عیال کے سوا کسی کے بھی مملکت میں داخلے پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ اس پابندی کا نفاذ بدھ تین فروری 2021 کو رات نو بجے سے ہوگا ۔وزارت داخلہ کے عہدیدار کا کہنا تھا کہ 13 جنوری 2021 کو فیصلہ کیا گیا تھا کہ کووڈ 19 کی وبا کے جاری رہنے کی وجہ سے مقامی شہریوں کو بیرون ملک سفر کی اجازت نہیں ہوگی‘۔ وزارت داخلہ نے نئی تبدیلیوں کے پیش نظر فیصلہ کیا ہے کہ سعودی شہریوں، سفارت کاروں، صحت کارکنان اور ان کے اہل و عیال کے سوا کسی کو بھی تین فروری 2021 بدھ کو رات نو بجے سے سعودی عرب آنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ یہ پابندی 20 ممالک سے آنے والوں پر لگائی گئی ہے۔ ارجنٹائن، متحدہ عرب امارات، وفاقی جرمنی، امریکہ، انڈونیشیا، آئرلینڈ، اٹلی، پاکستان، برازیل، پرتگال، برطانیہ، ترکی، جنوبی افریقہ، سویڈن، سوئٹزرلینڈ، فرانس، لبنان، مصر، انڈیا اور جاپان سے سعودی عرب آمد پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ وزارت داخلہ نے مزید کہا کہ اگر کسی اور ملک کے باشندے مملکت آنے سے 14 دن کے اندر مذکورہ ممالک میں سے کسی ایک ملک میں گئے یا وہاں سے گزرے ہوں گے انہیں بھی سعودی عرب آنے کی اجازت نہیں ہوگی۔وزارت داخلہ نے واضح کیا ہے کہ مذکورہ ممالک سے ٌآنے والے سعودیوں، سفارت کاروں، صحت کارکنان اور ان کے اہل و عیال کو وزارت صحت کے مقرر کردہ حفاظتی ضوابط کے مطابق مملکت آنے دیا جائے گا۔ ’مستثنٰی زمروں میں شامل ان افراد کو بھی سعودی عرب آنے کی اجازت ہوگی جو مملکت آنے سے قبل مبینہ ملکوں میں سے کسی ایک ملک آئے اور گزرے ہوں اوراس پر چودہ دن نہ گزرے ہوں۔