کورونا پروٹوکول کی خلاف ورزی کی وجہ سے جلد آجائے گی تیسری لہر ، دہلی اَن لاک پر ہائی کورٹ کا تبصرہ

نئی دہلی : لاک ڈاؤن پابندی ختم ہونے کے بعد دہلی ہائی کورٹ نے دہلی کے بازاروں میں قواعد کی خلاف ورزی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ عدالت نے کہا کہ کوروناپروٹوکول کی اس طرح کی خلاف ورزی سے انفیکشن کی تیسری لہر جلد آجائے گی ، جس کی اجازت ہر گز نہیں دی جاسکتی ہے۔ ہائی کورٹ نے کہا کہ کوڈ پروٹوکول کی خلاف ورزی کی وجہ سے تیسری لہر زیادہ تیزی سے آئے گی۔واضح ہو کہ دہلی ہائی کورٹ نے دہلی کے بازاروں میں بھیڑ اور کوڈ پروٹوکول کی پیروی نہیں کرنے والے لوگوں کا از خود نوٹس لیا ہے۔ ہائی کورٹ نے مرکز اور دہلی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے اسٹیٹس رپورٹ طلب کی ہے ۔ عدالت نے کہا کہ کرونا کی تیسری لہر کو روکنے کے لیے کوویڈ پروٹوکول کی سختی سے پیروی کرنے کی ضرورت ہے۔اپریل کے آخری ہفتے اور مئی کے شروع میں کورونا کی دوسری لہر کے خطرناک تباہی کو دیکھنے کے بعد اب دہلی میں روزانہ کورونا کیسز 200 سے کم درج ہورہے ہیں ۔ مثبت شرح 0.2 کے قریب ہے۔ ایسی صورتحال میں گزشتہ دو ہفتوں میں لاک ڈاون پابندیوں میں نرمی کی گئی ہے۔ جس کی وجہ سے بازاروں میں بہت بڑا ہجوم جمع ہو رہا ہے۔ معاشرتی دوری کی خلاف ورزی اور ماسک کا استعمال نہ کرنے کی خلاف ورزی بہت ساری جگہوں پر دیکھنے کو ملی ہیں۔