کورونا کا خوف:وکلا کورٹ نہیں پہنچے،سماعت منسوخ

نئی دہلی:کوروناوائرس کے تیزی سے بڑھتے ہوئے واقعات کے درمیان تمام خدمات آہستہ آہستہ شروع کی جارہی ہیں۔ یکم ستمبرسے دہلی ہائی کورٹ کے کچھ بینچوں میں فزیکل سماعت شروع ہوگئی ہے ، لیکن لوگوں میں خوف ہے۔ منگل کو کورونا کے خوف کی وجہ سے دہلی ہائی کورٹ کے وکلا سماعت کے لیے نہیں پہنچے۔ اس کی وجہ سے دہلی ہائی کورٹ میں کسی کیس کی سماعت نہیں ہوسکی ۔آج سنے جانے والے تمام مقدمات کو منسوخ کرنا پڑا۔دہلی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ڈی این پٹیل اورپرتک جالان کی بنچ میں کسی ایک کیس کی فیزیکل سماعت نہیں ہوسکی۔ آج کی سماعت تمام معاملات میں منسوخ کردی گئی۔ چیف جسٹس کی عدالت میں 22 مقدمات کی سماعت ہونی تھی ، لیکن کسی بھی معاملے میں وکلا شخصی طور پر عدالت کے کمرے میں پیش نہیں ہوئے۔ اس کی وجہ سے ، تمام معاملات میں سماعت ملتوی کردی گئی۔ان وکلاء میں سرکاری اور غیر سرکاری دونوں وکلا شامل تھے۔کمرئہ عدالت میں جہاں سینکڑوں وکلا ہرروز سماعت کے لیے حاضرہوتے تھے۔ آج وہاں صرف تین وکلا موجودتھے اوران کے مقدمات کی سماعت نہیں ہوسکی کیونکہ دوسری طرف کے وکلا غیرحاضرتھے۔