کورونا کی تیسری لہر کو مدنظر رکھ کر تیاری کریں: گڈکری

پریاگراج: مرکزی روڈ ٹرانسپورٹ اور شاہراہ وزیر نتن گڈکری نے بدھ کے روز کہا کہ کورونا کی تیسری لہر کے امکان کو مدنظر رکھتے ہوئے تیاری کرنی ہوگی اور ریاستوں کو آکسیجن اور دیگر طبی سہولیات کے معاملے میں خود انحصار ہونا پڑے گا۔سرسوتی ہائی ٹیک سٹی، نینی پریاگراج میں دہلی سے پربھایا انڈسٹریز کے آکسیجن پلانٹ کا سنگ بنیاد رکھنے کے پروگرام کو آن لائن سے خطاب کرتے ہوئے گڈکری نے نائب وزیر اعلی کیشیو موریہ اور وزیر سدھارتھ ناتھ سنگھ سے ریاست کے ہر ضلع کو بنانے کی درخواست کی۔ 50 سے زیادہ بستروں پر مشتمل اسپتالوں میں ائیر آکسیجن پلانٹس لگانا لازمی قرار دینے کے لیے وزیر موصوف نے کہا کہ آنے والے وقت میں تیسری لہر اور چوتھی لہر کا بحران ہے اور اس کوذہن میں رکھتے ہوئے کام کرنے کی ضرورت ہے۔اس کے ساتھ ہر ضلع میں آکسیجن سلنڈر بینک کی حیثیت کو دیکھنا ضروری ہے۔ اگر ضرورت ہو تو 4000-5000 سلنڈروں کو ریاستی حکومت کے ذریعہ ہر ضلع کے طبی نظام میں شامل کرنا چاہیے ۔پربھاویہ انڈسٹریز کے منیجنگ ڈائریکٹر امیش جیسوال کے اقدام کی تعریف کرتے ہوئے گڈکری نے کہاکہ میں صنعت، تجارت اور تعمیر کے میدان میں کام کرنے والی دوسری صنعت کاروں سے بھی معاشرے کے خلاف حساسیت کا مظاہرہ کرکے ایسے کام کرنے کی درخواست کرتا ہوں۔وزیر نے کہا کہ ہم نے ریڈ فنگس اور بلیک فنگس کے انجکشن بھی بنائے ہیں اور آج پونے میں 10000 انجکشن دیے جارہے ہیں، ہم یہ انجکشن اترپردیش کو حکومت کے ذریعہ بھی دے سکتے ہیں، ہم نے اسے 1250 روپے میں بنا یا ہے۔