کورونا بحران میں فرقہ وارانہ کشیدگی نہیں ہونے دی جائے گی:ممتابنرجی

کولکاتہ:مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے پھرسخت رخ اختیارکیاہے۔ ممتابنرجی نے منگل کو ایک پریس کانفرنس میں کہاہے کہ اب یہ وقت سیاست کرنے کانہیں ہے۔ انہوں نے کہاہے کہ میں نے پیر کو وزیر اعظم نریندر مودی سے گفتگوکے دوران یہ کہاتھا، اگر کچھ لوگوں کو لگتا ہے کہ وہ کورونا کے دوران فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا کردیں گے تو میں ایسا نہیں ہونے دوں گی۔ممتابنرجی نے اپنے مخالفین پر طنزیہ تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ میرے ساتھ سیاسی طور پر لڑنے کے لیے کافی وقت ہے۔صبر کرو، ابھی الیکشن ابھی باقی ہے۔پیر کو وزیر اعظم کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کا حوالہ دیتے ہوئے ممتا بنرجی نے کہاہے کہ جب ہم وزیر اعظم سے میٹنگ کرتے ہیں تو ہمیں امید ہے کہ ہمیں کچھ مل جائے گا، لیکن ہم ہمیشہ مایوس ہوتے ہیں،ہمارے 52000 کروڑروپئے مرکز کے پاس بقایا ہیں۔ممتا بنرجی نے کہاہے کہ ہمارے ذریعہ آمدنی رک گئی ہے،لیکن ہمیں خرچ کرنا پڑتا ہے۔ لوگ پریشانی میں ہیں، ان کے پاس پیسہ نہیں ہے۔ ممتا بنرجی نے کہاہے کہ کل وزیر اعظم نے کہا کہ کورونا باقی رہنا ہے اور ہمیں اس سے نمٹنا ہے، لیکن اس میں توازن قائم ہونا چاہیے، کورونا سے بھی نمٹا جاناچاہیے اورلوگوں کی جانوں کو بھی بچانا چاہیے۔