کانگریس کا’’راؤ پریم‘‘جاگا،سونیاگاندھی نے نرسمہارائوکی شان میں قصیدے پڑھے

نئی دہلی:کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے جمعہ کے روزکہاہے کہ سابق وزیر اعظم پی وی نرسمہا راؤکی جرات مندانہ قیادت کی وجہ سے ملک بہت سارے چیلنجوں پر قابو پانے میں کامیاب رہا ہے۔ پارٹی کو ان کی کامیابیوں اور ان کے تعاون پر فخر ہے۔اب تک کانگریس ان سے پلہ جھاڑتی رہی ہے۔کیوں کہ مسلمان انھیں بابری مسجدکامجرم سمجھتے ہیں جس کے بعدکانگریس کولمبے عرصے تک اقتدارسے محروم رہناپڑا۔پھرکانگریس عرصے تک ان کے نام لینے سے ڈرتی رہی،لیکن اب رام مندرکی تعمیرکے وقت تلنگانہ حکومت کا’’پریم ‘‘ان کے تئیں بڑھ گیاہے توکانگریس بھی اس کوبھنانے میں لگی ہے۔سونیاگاندھی نے یہ رائے راؤکی یاد میں تلنگانہ ریاستی کانگریس کمیٹی کے ذریعہ شروع کردہ یوم پیدائش کی تقریبات کے موقع پر بھیجے گئے پیغام میں دی۔انھوں نے کہاہے کہ پی وی نرسمہا راؤ کی صد سالہ تقریب ہم سب کے لیے ایک موقع ہے کہ وہ ایک بہت ہی علم دوست شخصیت کویادرکھیں اور انہیں خراج تحسین پیش کریں۔ریاستی اور قومی سطح کی سیاست میں طویل زندگی گزارنے کے بعد وہ ایسے وقت میں ملک کے وزیر اعظم بنے جب شدیدمعاشی بحران تھا۔ ان کی بہادر قیادت کی وجہ سے ملک بہت سارے چیلنجوں پرقابوپانے میں کامیاب رہا۔کانگریس صدر کے مطابق ، 24 جولائی 1991 کو پیش کردہ بجٹ نے ہمارے ملک میں معاشی تبدیلی کی راہ ہموار کردی۔ نرسمہا راؤ کے دورمیں ملک نے بہت سی سیاسی،معاشرتی اور خارجہ پالیسی کی کامیابیاں حاصل کیں۔ وہ کانگریس کے اہم لیڈرتھے جنہوں نے مختلف کرداروں میں پوری لگن کے ساتھ پارٹی کی خدمت کی۔انہوں نے کہاہے کہ میں تلنگانہ کانگریس کمیٹی کے زیر اہتمام پروگرام کے لیے انہیں مبارک باد پیش کرتا ہوں۔ کانگریس کو ان کی مختلف کامیابیوں اورتعاون پرفخرہے۔