چدمبرم نے کورونا پر تشویش کا اظہار کیا،کہا:ستمبر کے آخر تک ہوسکتے ہیں 65 لاکھ کیسز

نئی دہلی:کانگریس کے سینئر رہنما پی چدمبرم نے ہفتہ کے روز ملک میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز پر حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے دعوی کیا ہے کہ ہندوستان واحد ملک ہے جو لاک ڈاؤن کی حکمت عملی کا فائدہ اٹھاتا ہوا نظر نہیں آتا ہے۔ انہوں نے تخمینہ لگایا کہ ستمبر کے آخر تک ہندوستان میں کووڈ 19 مریضوں کی تعداد 65 لاکھ ہوسکتی ہے۔ ملک میں کووڈ 19 مریضوں کی تعداد 40 لاکھ کو عبور کرنے کے بعد چدمبرم نے حکومت پر حملہ کیا۔ تاہم وزارت صحت کے اعداد و شمار کے مطابق ہفتہ تک کورونا وائرس کے انفیکشن سے صحت یاب افراد کی تعداد بڑھ کر 3107227 ہوگئی ہے۔ چدمبرم نے کہاکہ 30 ستمبر تک میں نے اندازہ لگایا تھا کہ متاثرہ افراد کی تعداد 55 لاکھ ہوسکتی ہے۔ لیکن میں غلط تھا۔ ہندوستان 20 ستمبر تک اس اعداد و شمار پر پہنچ جائے گا اور ستمبر کے آخر تک متاثرہ افراد کی تعداد 65 لاکھ تک پہنچ سکتی ہے۔ سابق مرکزی وزیر نے کہا کہ ہندوستان واحد ملک ہے جو لاک ڈاؤن حکمت عملی سے فائدہ اٹھاتا ہوا نظر نہیں آتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم نریندر مودی نے 21 دن میں کورونا وائرس کو شکست دینے کا وعدہ کیا تھا ،اب انہیں یہ بتانا چاہئے کہ ہندوستان کیوں ناکام ہوا ہے جبکہ دوسرے ممالک کامیاب ہوتے دکھائی دے رہے ہیں ؟