بورڈ کا سیاست سے کوئی سروکار نہیں،یوپی الیکشن کے سلسلہ میں صدر آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ مولانا سید محمد رابع حسنی ندوی کا وضاحتی بیان

 

نئی دہلی (پریس ریلیز): آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈکے صدرحضرت مولانا سید محمد رابع حسنی ندوی صاحب نے اپنے وضاحتی بیان میں فرمایاکہ فروری ۲۰۲۲ء میں اترپردیش میں الیکشن ہے، اس کی گہما گہمی ابھی سے شروع ہوگئی ہے ،کچھ لوگ مسلم پرسنل لا بورڈ اور خاص کر بحیثیت صدر مجھ سے یہ مطالبہ کررہے ہیں کہ کسی ایک پارٹی کی حمایت میں اپیل جاری کی جائے ،یہ لوگ نہ تو مسلم پرسنل لا بورڈ کے دستور سے واقف ہیں نہ اس کے دائرہ کار سے، نہ اس کے اغراض ومقاصد سے اور نہ اس کی پچھلی تاریخ سے ،بورڈ کے دستور کی دفعہ نمبر 4 میں واضح طور پر لکھا ہے کہ’’ مسلم پرسنل لا بورڈ کا بحیثیت ادارہ، سیاست سے کوئی سروکار نہیں ہوگا‘‘ ۔

صدر محترم نے مزید فرمایاکہ مسلم پرسنل لا بورڈ کی طرف منسوب کسی سیاسی اعلان یا کسی سیاسی پارٹی کی حمایت کی اپیل کومعتبر نہ سمجھا جائے ،خود میرا اور ندوۃ العلماء کا ہمیشہ یہی موقف رہا ہے، یہ الگ بات ہے کہ الیکشن کے موقع پر افواہوں کا بازار گرم ہوجاتا ہے اور جھوٹے اور فرضی بیانات سے لوگوں کو گمراہ کیا جاتا ہے ،ایسے لوگوں سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے، ان کو پہچانئے اور دھوکہ نہ کھائیے ۔

ساتھ ہی آپ نے یہ بھی فرمایاکہ ووٹ دینا آپ کا جمہوری حق ہے کس کو چننا ہے یہ فیصلہ خود آپ کو کرنا ہے، سوچ سمجھ کر اپنے اس حق کا استعمال کیجیے ،ملک وملت کا مفاد پیش نظر رکھیے۔

صدر مسلم پرسنل لا بورڈنے کروناگائیڈ لائن کے تعلق سے فرمایاکہ ہمارا ملک کرونا کے بحران سے دوچار ہے، عید قرباں کے موقع پر ضروری احتیاط لازمی ہے، سرکار کی طرف سے جو ہدایات دی گئی ہیں ان کا خیال رکھنا ضروری ہے ۔