بلیک فنگس کی دو اپر ٹیکس نہیں، ویکسین پر 5فیصد جی ایس ٹی: نرملا سیتارامن

نئی دہلی: وزیر خزانہ نرملا سیتارامن کی زیرصدارت جی ایس ٹی کونسل کے 44 ویں اجلاس کے بعدفیصلہ کیا گیا کہ کورونا ویکسین پر جی ایس ٹی کی 5 فیصد شرح برقرار رکھی جائے گی۔ اجلاس کے بعد پریس کانفرنس میں وزیر خزانہ نے کہا کہ جی ایس ٹی کونسل نے بلیک فنگس کی دوا کو ٹیکس فری رکھنے کی منظوری دی ہے۔ اس کے علاوہ جی ایس ٹی کونسل نے ریمڈیسیویر دوا پر جی ایس ٹی کو 12 فیصد سے کم کرکے 5 فیصد کرنے کی تجویز کو منظوری دی ہے۔ آکسی میٹر ، میڈیکل گریڈ آکسیجن اور وینٹی لیٹرز پر بھی جی ایس ٹی کی شرح 12 فیصد سے گھٹا کر 5 فیصد کردی گئی ہے۔سیتارامن کے مطابق مرکزی حکومت 75 فیصد ویکسین خرید رہی ہے اور اس پر جی ایس ٹی بھی ادا کر رہی ہے۔ 75 فیصد ویکسین جو عوام کو سرکاری اسپتالوں میں مفت فراہم کی جارہی ہے ، اس سے عوام پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔سیتارامن نے یہ بھی کہا کہ الیکٹرک فرنیسز اور درجہ حرارت کی جانچ کرنے کے آلات پر جی ایس ٹی کو 5 فیصد اور ایمبولنس پر 12 فیصد کردیا گیا ہے۔ یہ نرخ ستمبر تک کےلیے  ہی مؤثر ہوں گے۔ وزراء کے گروپ (جی او ایم) نے اگست تک ان میں کمی کی سفارش کی تھی۔واضح ہوکہ28 مئی کو ہونے والی آخری میٹنگ میں کووڈسے متعلقہ ضروری اشیاء پی پی ای کٹس ، ماسک اور ویکسین پر ٹیکس میں راحت دینے کے لیے وزراء کا ایک گروپ تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔