بھاجپا اقلیتی مورچہ کے سربراہ کا دُکھڑا :10 لوگوں کو پارٹی سے جوڑتا ہوں ،تو 25بھاگ جاتے ہیں

بھوپال :ریاست مدھیہ پردیش کے ضلع راج گڑھ میں بی جے پی اقلیتی مورچہ کے ضلع صدر اشرف قریشی نے ایک درخواست کرتے ہوئے کہا کہ اس بات کا خیال رکھیں کہ پارٹی میٹنگ میں اقلیتوں کے بارے میں ایسی زبان استعمال نہ کی جائے جس سے انہیں تکلیف ہو۔ پارٹی کے اقلیتی محاذ نے اپنا درد ظاہر کرتے ہوئے بھارتیہ جنتا پارٹی کے مدھیہ پردیش کے انچارج مرلی دھر راؤ کے سامنے اقلیت مخالف بیان بازی پر اعتراض کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی اجلاس میں ایسی بات نہیں ہونی چاہئے جس سے اقلیتوں کو تکلیف ہو۔ اس نے کہا میں 10 لوگوں کو شامل کرتا ہوں اور 25 لوگ بھاگ جاتے ہیں۔ راج گڑھ میں بی جے پی اقلیتی مورچہ کے ضلع صدر اشرف قریشی نے کہا کہ میری درخواست ہے کہ جب بھی کوئی میٹنگ ہو، اس بات کو ذہن میں رکھا جائے کہ وہاں اقلیتیں بھی موجود ہوں۔ اس لیے ایسے وقت میں یہ بات ذہن میں رکھیں کہ آپ اس قسم کا کام نہ کریں یا ایسی بات نہ کریں جس سے ہمارے جذبات مجروح ہوں کیونکہ اس سے مجھے بہت تکلیف ہوتی ہے۔میں 10 لوگوں کو شامل کرتا ہوں اور 25 لوگ بھاگ جاتے ہیں۔ اس کے بعد اشرف قریشی نے پارٹی میں موجود لوگوں سے معافی بھی مانگی اور کہا کہ حاضرین اگر میری بات سے آپ کو تکلیف ہوئی ہے تو میں اس کے لیے معذرت خواہ ہوں۔ میں نے آپ کے سامنے اپنے دل کی بات رکھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دلبر سنگھ یادو جو کہ ضلع صدر ہیں وہ مجھے بہت سپورٹ کرتے ہیں۔ مجھے آگے بڑھانے کے لیے کام کریں اور میں تھوڑا سخت ہونے کے لیے معذرت خواہ ہوں۔