بی جے پی لیڈر سبرامنیم سوامی کی پی ایم مودی کو صلاح

نیپالی سفارت کاروں سے نرم زبان میں کریں بات، وہ ہمارے خونی بھائی ہیں
نئی دہلی:بی جے پی کے سینئر لیڈر سبرامنیم سوامی شاید نیپال کی جانب سے مل رہی دھمکیوں سے نمٹنے کے ہندوستان کے طریقوں سے خوش نہیں ہیں۔انہوں نے وزارت خارجہ کے سفارت کاروں کو نیپال کے لئے نرم زبان کے استعمال کا مشورہ دیا ہے۔تاہم، انہوں نے سفارت کاروں کو براہ راست خطاب کرنے سے بچتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی سے اپیل کی ہے کہ وہ وزارت خارجہ کو یہ مشورہ دیں۔ انہوں نے ٹویٹ کرکے کہاکہ پی ایم کو چاہیے کہ وہ وزارت خارجہ کے سفارت کاروں کو اپنے نیپالی ہم منصبوں کے ساتھ نرم زبان کا استعمال کرنے کو کہیں۔سوامی نے نیپالیوں کو رکت بندھو (خونی بھائی) بتاتے ہوئے کہا کہ ہمیں ان کے لئے بڑا دل رکھنا چاہئے۔انہوں نے کہاکہ نیپالی ہمارے چھوٹے بھائی ہیں،اگر نیپالی خود کو الگ تھلگ محسوس کریں تو ہمیں اپنا دل بڑا کرکے ان کی تکلیف سمجھ کر ان کے جذبات کا احترام کرنا چاہئے۔سوال اٹھتا ہے کہ آخر ڈاکٹر سوامی کو یہ مشورہ دینے کی ضرورت کیوں محسوس ہوئی؟ یہ سوال اس لیے بھی اہم ہے کہ اب تک ہندوستان کی جانب سے نیپال کے لئے سخت الفاظ کا استعمال نہیں کیا گیا۔اس کے برعکس نیپال کے وزیر اعظم کے پی اولی نے یہاں تک کہہ دیا کہ کورونا وائرس کا زیادہ خطرہ ہندوستان سے ہے۔اتنا ہی نہیں، نیپال کی حکومت نے نیا نقشہ جاری کرتے ہوئے ہندوستانی علاقوں کو اپنی حد میں بتا دیا۔