بی جے پی لیڈرنے پارٹی کاجھنڈادکھاکرٹرین روانہ کیا،اپوزیشن کا اعتراض

نئی دہلی:تارکین وطن محنت کشوں، طالب علموں اور دیگر افرادکولے کر چھ خصوصی ٹرینیں کیرالہ، تلنگانہ، مہاراشٹر اور راجستھان سے روانہ ہوئیں۔ یہ ٹرینیں جھارکھنڈ، اڈیشہ، مدھیہ پردیش، اتر پردیش اوربہارکے لیے ہیں۔متعلقہ ریاستوں کی درخواست پران ٹرینوں کا انتظام کیاگیاہے۔گجرات سے بھی لوگوں کو لے کر ٹرین روانہ ہوئی جسے بی جے پی کے لیڈر نے اپنی پارٹی کاجھنڈا دکھا کر روانہ کیا جس کے بعدکانگریس لیڈر احمد پٹیل نے اس معاملے پر چار سوال اٹھائے ہیں۔احمد پٹیل نے ٹویٹ کرکے سوال کیا ہے کہ سورت سے ٹرین روانہ کرنے کے لیے بی جے پی پرچم کی جگہ ترنگاکااستعمال کیوں نہیں کیاگیا؟ اپنے دوسرے سوال میں انہوں نے پوچھاہے کہ ٹرین بی جے پی کی ہے یابھارت کی؟ تیسرے سوال میں انہوں نے پوچھاہے کہ غریب مہاجر گجرات سے اڈیشہ کے اس سفرکے لیے پیسے کیوں دے رہے تھے؟اپنے آخری سوال میں انھوں نے پوچھاہے کہ ان سفر کے اخراجات کوپی ایم کیئرس فنڈسے کیوں نہیں دیاگیا؟جس میں جم کرچندہ لیاگیاہے۔اس سے پہلے کانگریس نے الزام لگایاتھاکہ سرکاری راحتی اشیاء پربی جے پی اورآرایس ایس کاٹیگ لگاکرتقسیم کیاجارہاہے۔یہ کس طرح مناسب ہوسکتاہے۔