بی جے پی کے پاس ملک کی تعمیرکاکوئی وژن نہیں،پی ڈی پی امیدوارکی گرفتاری پر محبوبہ مفتی برہم

جموں:جموں وکشمیر کی سابق وزیراعلیٰ اورپی ڈی پی کی سربراہ محبوبہ مفتی نے الزام عائد کیا ہے کہ ضلعی ترقیاتی کونسل (ڈی ڈی سی)انتخابات میں ان کی پارٹی کی امیدوار کو نامزدگی سے قبل حراست میں لیا گیا ہے۔ انہوں نے پارٹی امیدوار کی رہائی کامطالبہ کیا ہے۔محبوبہ مفتی نے ہفتے کے روز ٹویٹ کیا ہے کہ ہندوستانی حکومت غیربی جے پی پارٹیوں کو ڈی ڈی سی انتخابات میں حصہ لینے سے روک رہی ہے۔ سیکیورٹی کے مناسب انتظامات کرتے ہوئے پی ڈی پی کے بشیر احمد کو پہلگام میں حراست میں لیا گیا تھا۔ محبوبہ مفتی نے جموں وکشمیرکے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کو ٹیگ کرتے ہوئے لکھاہے کہ نامزدگی کا آج آخری دن ہے۔ پی ڈی پی امیدوار کی رہائی کے لیے اننت ناگ کے ضلعی کلکٹر سے بات کی ، جموں و کشمیر میں ڈی ڈی سی کے انتخاب کا عمل جاری ہے۔ ایک ہی وقت میں ، عبد اللہ کنبہ اور محبوبہ مفتی خفیہ معاہدے کے حوالے سے بی جے پی لیڈران کے نشانے پرہیں۔ دوسری طرف محبوبہ مفتی نے کہاہے کہ بی جے پی لوگوں کے عدم اطمینان اوراصل امورکومستردکرنے کی کوشش کر رہی ہے۔یہ حقیقی امورسے دورجانے کی حکمت عملی ہے۔ ملک کے لیے اس کاوژن کیا ہے؟ جواہر لال نہرو کا وژن تھا ، ان (بی جے پی) کا کوئی وژن نہیں ہے۔ بدقسمتی سے بیشتر میڈیابی جے پی کے پروپیگنڈے کی بات کرتا ہے۔ جموں وکشمیر کاآئین لوٹ لیاگیاہے۔