’بھارت ہندو راشٹر ہے، تھا اور رہے گا‘، اب ہندو ایک ہو چکاہے: بی جے پی جنرل سکریٹری کا متنازع بیان

نئی دہلی:بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری سی ٹی روی کا کہنا ہے کہ ’ہندوستان ہندوراشٹر ہے، تھا اور رہے گا‘۔ انہوں نے کانگریس کو نشانہ بناتے ہوئے یہ بات کہی۔ روی نے کہا کہ کانگریس نے ابتدا میں تقسیم کی سیاست کی لیکن اب انہوں نے (کانگریس والوں) نے ہندوؤں کو خوش کرنے کے لیے پوجا اور مندروں میں جانا شروع کر دیا ہے۔ بی جے پی لیڈر نے کانگریس کو مشورہ دیا کہ اس کے لیڈروں کو صرف انتخابات کے دوران مندر کا دورہ نہیں کرنا چاہیے۔ہندوستان ایک ’ہندو راشٹر تھا، ہے اور رہے گا‘۔ پہلے کانگریس اقلیتوں کو خوش کرتی تھی لیکن اب وہ جانتے ہیں کہ ہندو متحد ہیں۔ اب وہ درگا پوجا کر رہے ہیں اور مندروں میں جا رہے ہیں۔ اگر آپ ہندو ہیں تو یہ صرف انتخابات کیلئے نہ کریں، اسے باقاعدگی سے کریں۔روی کو اپوزیشن جماعتوں پر متنازعہ حملے کرنے کے لیے جانا جاتا ہے۔ اس نے اے آئی ایم آئی ایم کا موازنہ طالبان سے کیاتھا۔ 31 اگست کو روی نے کہا تھا کہ اے آئی ایم آئی ایم کرناٹک کے طالبان کی طرح ہے۔ اے آئی ایم آئی ایم اور ایس ڈی پی آئی کا نظریہ طالبان سے ملتا جلتا ہے۔