بہار کا اگلا امیرشریعت کون؟،مولاناخالدسیف اللہ رحمانی کو پروفیسر محسن عثمانی کے مضمون سے اتفاق نہیں

حیدرآباد:محسن عثمانی ندوی نے ایک متنازعہ مضمون لکھاتھا،جس میں امیرشریعت رابع مولانامنت اللہ رحمانی ؒ تک کونشانہ بنایاتھا،نیزاسی مضمون میں مولاناخالدسیف اللہ رحمانی کوامیرشریعت بنانے کی بات کہی تھی،جس سے سوشل میڈیاپرکئی طرح کے سوال ہورہے تھے اوراسے مولاناخالدسیف اللہ رحمانی سے جوڑاجارہاتھا۔جب اس مضمون کی اطلاع مولاناخالدسیف اللہ رحمانی کودی گئی توانھوں نے سخت برہمی کااظہارکیا۔جب مولاناسے اس پررابطہ کیاگیاتوانہوں نے اس سے لاعلمی کا اظہار کیا اور بتایاکہ میں اس مضمون سے اتفاق نہیں رکھتا ہوں۔ اس مضمون میں سابق امیر شریعت حضرت مولانا منت اللہ رحمانی علیہ الرحمہ کے تعلق سے کچھ نازیبا باتیں لکھی گئی ہیں تو انہوں نے کہاہے کہ مولانا منت اللہ رحمانی علیہ الرحمہ نے امارت کو ایک الگ شناخت بخشی ہے اور ان کا دور امارت شرعیہ کا سنہرا دور ہے۔اس طرح کی تحریرکسی بھی طرح قابل قبول نہیں ہے۔ مولانانے سخت ناراضگی کااظہارکیااورمتنازعہ مضمون سے دستبرداری ظاہرکی ۔