بھارت کورونا کے خلاف جنگ میں دوسروں سے بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کررہا ہے:مودی

نئی دہلی:وزیراعظم نریندر مودی نے ملک میں جاری کورونا وائرس کے درمیان ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعے وزرائے اعلیٰ سے بات کی۔اس دوران ، پی ایم مودی نے کہاہے کہ بھارت کورونا کے خلاف جنگ میں دوسروں سے بہتر کارکردگی کامظاہرہ کررہاہے۔ جئب کہ آئے دن کسیزکی تعدادتیزی سے بڑھ رہی ہے۔سخت لاک ڈائون کے باوجودکسیزمیں اضافہ لاک ڈائون کی ناکامی سمجھی جارہی ہے۔مزدورں کی غیرمحتاط نقل مکانی نے اس می اورااضافہ کیاہے۔اپوزیشن اسے حکومت کی ناکامی بتارہاہے ۔پی ایم مودی نے کہاہے کہ ہندوستان ان ممالک میں شامل ہے جہاں اموات کی شرح سب سے کم ہے۔انھوں نے کہاہے کہ تھوڑی سی لاپرواہی ، تھوڑی نرمی ، نظم و ضبط کی کمی کورونا کے خلاف ہماری لڑائی کو کمزور کردے گی۔ ان لاک 1 کو2 ہفتوں کا عرصہ گزرنے والاہے ، اس بحث کے دوران آنے والے تجربات کا جائزہ مزید تبادلہ خیال کے لیے بہت مفیدثابت ہوسکتا ہے۔پی ایم مودی نے کہاہے کہ دوگزفاصلہ بہت ضروری ہے۔ ماسک اور چہرے کوچھپانا ضروری ہے۔ یہ کورونا کو پھیلنے سے روکنے میں معاون ثابت ہوں گے۔ جتناہم کورونا کو روک سکتے ہیں ، اتنی ہی معیشت بھی کھل جائے گی۔وصولی کی شرح 50 فیصد سے اوپرہوئی ہے۔بجلی کے استعمال میں اضافہ ہواہے۔ خریف کی بوائی میں 12 سے 13 فیصداضافہ ہواہے۔ کھادکی فروخت پچھلے سال سے زیادہ ہے۔انھوں نے کہاہے کہ مئی میں کھاد کی فروخت پچھلے سال کے مقابلہ میں دوگنی ہوگئی ہے۔ معیشت دوبارہ پٹری پرآگئی ہے۔ جون کے پہلے ہفتے میں ، برآمدات اپنی پرانی حالت میں واپس آگئیں اور کورونا کی سابقہ سطح تک پہنچ گئیں۔انہوں نے کہاہے کہ ہمیں ہمیشہ یہ بات ذہن میں رکھنی ہوگی کہ جتنا ہم کوروناکوروک سکتے ہیں ، اتنی ہی اس کی افزائش بند ہوگی ، ہماری معیشت اتنی ہی زیادہ کھل جائے گی ، ہمارے دفاترکھلیں گے، بازار کھلیں گے ، نقل وحمل کے ذرائع کھلیں گے ، اور روزگار کے نئے مواقع زیادہ ہوں گے۔