بھاجپا صدرجے پی نڈا اور امت شاہ نے رام مندرزمین گھوٹالہ کیس کی رپورٹ طلب کی

ایودھیا: ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے دوران زمین گھوٹالہ اور اس سے جڑے تنازعہ زور پکڑتا جارہا ہے۔ آئندہ اسمبلی انتخابات کے پیش نظریوپی کی سیاست میں اس مسئلے نے سیاسی ابال پیدا کردیا ہے ۔ سماج وادی پارٹی اور عام آدمی پارٹی مسلسل بی جے پی کو گھیرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ اس تنازعہ کی بازگشت کے بعد ذرائع کے مطابق بی جے پی صدر جے پی نڈا اور وزیر داخلہ امت شاہ نے اس پورے معاملے کے حقائق سے متعلق رپورٹ طلب کی ہیں۔ اسی کے ساتھ ساتھ یہ بھی بتایا جارہا ہے کہ آر ایس ایس کی قیادت نے رام جنم بھومی ٹرسٹ سے بھی اس سارے تنازعہ کی رپورٹ طلب کی ہے،تاہم اس سلسلے میں تمام حقائق کے ساتھ رام جنم بھومی زمین ٹرسٹ کی طرف سے پہلے ہی وضاحت پیش کی جا چکی ہے۔ شری رام جنم بھومی تیرتھ ٹرسٹ کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ اب تک جتنی بھی زمینیں خریدی گئی ہیں ، ان کی قیمت بازار سے بہت کم ہے۔ ٹرسٹ کے جنرل سکریٹری اور وشو ہندو پریشد کے رہنما چمپت رائے کی جانب سے ایک بیان جاری کیا گیا کہ اس زمین کی خریداری اور فروخت کے سلسلے میں الزامات عائد کیے جارہے ہیں ، وہ زمین کئی سال پہلے رجسٹرڈ تھی۔ 18 مارچ 2021 کو اس کے فروخت کنندگان نے پہلے بیع نامہ کرایا اور اس کے بعد ٹرسٹ کے ساتھ معاہدہ کیا گیا۔ ٹرسٹ کے جنرل سکریٹری چمپت رائے نے کہا کہ گھوٹالے کا تنازعہ سیاسی مفاد کے لیے پیدا کیا جارہا ہے۔