بابری مسجدکی شہادت میں بی جے پی کے ساتھ کانگریس کابھی ہاتھ:اویسی

نئی دہلی:آئندہ ہفتے رام مندرکی تعمیرکے لیے ’’بھومی پوجن‘‘ کی اطلاعات کے درمیان لوک سبھا کے رکن پارلیمنٹ اور آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسدالدین اویسی نے مرکز میں مودی حکومت کے ساتھ ساتھ کانگریس پر بھی حملہ کیا ہے۔ اویسی نے بدھ کے روز ایک ٹویٹ میں کہاہے کہ بابری مسجدکی شہادت میں کانگریس بھی شامل ہے۔ انہوں نے کہاہے کہ مسجدشہید کرنے میں کانگریس بھی سنگھ کے ساتھ شامل ہوئی تھی۔اویسی نے ایک میڈیارپورٹ کے ذریعے کانگریس پرحملہ کیاہے جس میں کہاگیا تھا کہ بھومی پوجن کی تقریب میں مدعونہ کیے جانے کی وجہ سے کانگریس ناراض ہے اوربی جے پی نے اس کا سارا سہرااپنے سرلیاتھا۔ اس پر اویسی نے ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ہاں جو بھی حقدار ہے اسے کریڈٹ دیا جانا چاہیے۔ آخرکاریہ راجیو گاندھی ہی تھے جنھوں نے بابری مسجد کا تالاکھولا اوریہ پی وی نرسمہارائوہی تھے جنھوں نے وزیر اعظم کے عہدے پر رہتے ہوئے مکمل شہادت کو دیکھا۔ شہادت کی اس مہم میں کانگریس نے سنگھ پریوار کے ساتھ ہاتھ ملایاتھا۔اس سے پہلے اویسی نے مودی کے اجودھیاجانے کوآئین کی خلاف ورزی بتاتے ہوئے سیکولرزم کے منافی قرار دیا تھا۔