’بابا کا ڈھابا‘ چلانے والے مشہور معمر شخص نے کی خودکشی کی کوشش ، اسپتال میں داخل

نئی دہلی :دہلی کے مالویہ نگر میں’بابا کا ڈھابا‘ چلانے والے معمرشخص کانتا پرساد کی خود کشی کی کوشش کا معاملہ جمعرات کی شب کو منظرعام پر آیا ہے۔ کانتا پرساد کو علاج کے لیے صفدرجنگ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے ، جہاں اس معمر کی حالت مستحکم بتائی جارہی ہے۔حال ہی میں کانتا پرساد نے یوٹیوبر گورو واسن سے اپنی غلطی کی معافی مانگی ہے۔ خیال رہے کہ گورو نے اس معمر شخص کی ویڈیو گذشتہ سال لاک ڈاؤن کے دنوں سوشل میڈیا پر شیئر کیا تھا، جس کے بدولت یہ معمر راتوں رات مشہور ہوگیا تھا۔ دہلی پولیس کے مطابق کانتا پرساد کو جمعرات کی شب گیارہ بجکر 30 منٹ پر صفدرجنگ اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ ڈاکٹروں کے ذریعہ کیے گئے متعدد ٹیسٹوں کے دوران یہ پتہ چلا ہے کہ اس نے خواب آور گولیاں لی تھیں اور شراب نوشی بھی کی تھی ، جس کی وجہ سے وہ بیہوش ہوگیا تھا۔ پولیس اب تحقیقات کر رہی ہے کہ آیا کانتا پرساد نے خود کشی کی کوشش کی تھی؟ معاملے کی تفتیش جاری ہے۔ڈی سی پی (ساؤتھ) اتول ٹھاکر نے بتایا کہ معمر کانتا پرساد کے بیٹے کرن نے پولیس کو دیے گئے اپنے بیان میں بتایا ہے کہ اس کے والد نے شراب اور نیند کی گولیاں لی ہیں ، تفتیش جاری ہے، میں اس سلسلے کچھ نہیں جانتا ، مجھے نہیں معلوم کہ انہوں نے کیا کھایا تھا۔ مجھے یہ بھی نہیں معلوم ان کے دماغ میں کیا چل رہا تھا۔گزشہ دنوں جب یوٹیوبر گورو سے ملنے کے لیے ایک بار پھر ڈھابا پر پہنچا تھا۔خیال رہے کہ کانتاپرساد مالویہ نگر میں سڑک کے کنارے ایک چھوٹا سا ڈھابا چلاتا ہے ، یوٹیوبر کے ذریعہ مشہور ہونے کے بعد گذشتہ سال دسمبر میں اسی علاقہ میں ایک نیا ریستوراں کھولا تھا ، جو نقصان کے سبب کچھ عرصے بعد بند ہوگیا تھا، حالات ایسے بدلے کہ اس معمر کو پھر اپنے پرانے ڈھابے پر لوٹنا پڑا۔