اورنگ آباد میں مشن محلہ محلہ لائبریری کے تحت پانچویں لائبریری کا قیام

اورنگ آباد:اورنگ آباد میں” مشن مریم مریم محلہ محلہ لائبریری کے تحت پانچویں لائبریری کا قیام عمل میں آیا،جسے مشہور مراٹھی شاعر الہی جمعدار کے نام سے موسوم کیا گیا ہے۔اس کا افتتاح امان اللہ موتی والا ہائی اسکول کے صدر مدرس خان جمیل احمد (ضلع صدر فیم) کے ہاتھوں عمل میں آیا۔ اورنگ آباد شہر کے مشہور علاقہ نارے گاؤں عزیزیہ کالونی جہاں کی آبادی کی اکثریت مزدور پیشہ افراد پر مشتمل ہے ایسے پسماندہ علاقہ میں یہ لائبریری قائم کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ یہ مریم مرزا کے مشن محلہ محلہ لائبریری کی پانچویں لائبریری ہے جس کا آج افتتاح عمل میں آیا ہے۔ مریم مرزا کا عزم سال بھر میں َاورنگ آباد شہر میں 60 لائبریریاں قائم کرنے کا ہے۔ ریڈ اینڈ لیڈ فاؤنڈیشن اور فیم کے اشتراک سے یہ پروگرام چلایا جا رہا ہے۔ لائبریری کے افتتاح کے موقع پر مہمانانِ خصوصی میں نارے گاؤں مہانگر پالیکا ہائی اسکول کے اساتذہ شیخ علیم سر، مشتاق سر مستقیم سر اور سماجی کارکن علی یار خان موجود تھے ۔
ریڈ اینڈ لیڈ فاؤنڈیشن کے صدر مرزا عبدالقیوم ندوی لائبریری کے قیام کے اغراض و مقاصد اور ان کی دختر مریم مرزا کے عزائم کے بارے میں تفصیل سے بتاتے ہوئے کہا کہ کہ مریم مرزا چٹھی جماعت کی طالبہ ہے جسے بچپن سے پڑھنے کا شوق ہے اس کے اپنی ذاتی لائبریری ہے جس میں 150 کتابیں ہیں۔ میں نے گزشتہ 14 نومبر کو یومِ اطفال کے موقع پر اسے مزید 150 کتابیں تحفہ میں دی تھیں۔ مریم کے کہنے پر اس کی سہیلیوں اور محلے کے بچوں کے لیے محلہ لائبریری شروع کی گئی جو بہت مقبول ہو رہی ہیں۔ ان کا واحد مقصد نئی نسل کو اپنی تہذیب و ثقافت، اپنی مادری زبان اردو کے ساتھ دیگر زبانوں میں شائع کتابیں پڑھوانا اور ان کے اندر مطالعہ کا شوق پیدا کرنا ہے۔ شہر کی پہلی بچوں کی لائبریری ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام محلہ لائبریری کا افتتاح 8/جنوری کو رکن راجیہ سبھا کے ہاتھوں عمل میں آیا تھا۔
لائبریری کی افتتاحی تقریب میں طلبا میں قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان دہلی سے شائع شدہ ماہنامہ بچوں کی دنیا مرزا ورلڈ بک ہاؤس کی جانب سے تقسیم کیا گیا۔اس محلہ لائبریری کی ذمہ داری مریم مرزا کی پھوپھی بانو جاوید پٹھان نے اپنے ذمہ لی ہے اور دادی نے اپنا ایک کمرہ اس کے لیے دیا ہے۔ جہاں سے روزانہ بچوں کو شام 5تا 6بجے تک کتابیں دی جائیں گی جسے طلباء اپنے گھر لے جائیں گے اور پڑھ کر دوسری کتابیں لے جا سکیں گے.