آسام سیلاب:26 لاکھ متاثرین،89 افرادکی موت،کھیتوں میں گھسا پانی اور جانور بے حال

گوہاٹی:آسام کورونا کی وبا کے دوران شدید سیلاب سے دوچار ہے۔ آسام کے 26 اضلاع سیلاب سے بری طرح متاثر ہیں۔ بدھ تک 89 افراد سیلاب سے وابستہ واقعات میں اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔ آسام اسٹیٹ ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے مطابق آسام میں سیلاب کا سب سے زیادہ متاثر بارپیٹا، ڈبروگڑھ، کوکراجھار، بونگیاگائوں اورتنسوکیہ میں ہوا ہے۔ یہاں تقریبا 26 2631343 افراد متاثر ہوئے ہیں۔برہما پترا میں پانی کی سطح بڑھنے سے 2525 دیہات میں پانی بھرگیاہے۔ اس نے 115515.25 ہیکٹر فصل کو تباہ کردیا ہے۔ قاضی رنگا نیشنل پارک میں، سیلاب کی وجہ سے 120 جانوروں کی موت ہوگئی اور 147 کو بچایا گیا۔ پارک کا 80 فیصد پانی میں ڈوبا ہوا ہے۔ آسام کے اس سیلاب میں قاضی رنگا نیشنل پارک کے بہت سے گینڈوں کی موت ہوگئی۔کئی ہرن برہم پترکے بہائوسے ادھرادھربہ گئے۔ اس کے علاوہ قاضی رنگا میں پانی بھرنے کی وجہ سے بہت سے جانور سڑک پار کرتے ہوئے اور دوسری طرف جاتے ہوئے دکھے۔ فی الحال 391 امدادی کیمپ 45281 افراد کی مدد کر رہے ہیں۔ایس ڈی آر ایف، این ڈی آر ایف، سرکل افسران اور مقامی لوگوں نے 452 افراد کو محفوظ مقامات پر پہنچایا۔ سیلاب کے باعث سڑکیں اور پل تباہ ہوگئے، لوگوں کے گھر بہہ گئے۔