مولانا سید ارشد مدنی اور رام سینا کے چیف آچاریہ شری وشنو ونودم کی ملاقات،بھائی چارے کے فروغ پر زور

دیوبند:(سمیر چودھری)رام سینا کے چیف آچاریہ شری وشنو ونودم نے آج دیوبند پہنچ کر جمعیۃ علماء ہند کے قومی صدر مولانا سید ارشد مدنی سے ان کی رہائش گاہ پر خیر سگالی ملاقات کرکے آپسی بھائی چارہ اور ہندو مسلم اتحادکو مضبوط بنانے پر زور دیا۔ اس دوران دونوں رہنماؤں نے ملک کے موجودہ حالات پر گفتگو کرتے ہوئے ملک کی ترقی کے لئے باہمی اتحاد اور آپسی بھائی چارہ کو ناگزیر قرار دیا۔ اس دوران آچاریہ شری وشنوونودم نے جمعیۃ صدر سے گفتگو کرتے ہوئے اس بات پر زو ردیا کہ موجودہ حالات میں تمام مذاہب کے رہنماؤں کو متحد ہوکر ایک مذہبی سمّیلن کا انعقاد کرنا چاہئے ،جہاں سے باہمی اتحاد کا مشترکہ کا پیغام پورے ملک اور دنیا بھر میں دیا جاسکے۔ اس دوران صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا سید ارشدمدنی نے کہاکہ ملک میں آپسی بھائی چارہ اور امن وامان کی بقاء کے لئے جمعیۃ علماء ہند روز اول سے عملی کام کررہی ہے،انہوں نے کہاکہ آپسی بھائی چارہ اور اتحاد کو مضبوط بنانے کے لئے ہماری جماعت ہمیشہ پیش پیش رہتی ہے اور آئندہ بھی ملک کی ترقی،امن واخوت اور بھائی چارہ کے لئے جب ہماری ضرورت ہوگی ہم سب سے آگے رہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ جمعیۃ علماء ہند گزشتہ ایک سو سال سے باہمی اتحاد،امن وسلامتی اور ملک کی ترقی کے لئے بنیادی کام کررہی ہے،ہمارا بھی یہی ماننا ہے کہ آپسی اتحاد اور امن وامان کے بغیر ملک ترقی نہیں کرسکتاہے، ملک کی ترقی کے لئے متحدہ طورپر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ اس دوران مولانا سید ارشد مدنی نے آچاریہ کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی۔ آچاریہ شری وشنو ونودم نے مولاناارشد مدنی کی جم کر تعریف کرتے ہوئے انہیں انسانیت کی مثال قرار دیا اور کہاکہ جب تک مولانا جیسی شخصیتیں یہاں موجود ہیں اس وقت تک ہمارے ملک کو کوئی نقصان نہیں پہنچاسکتا۔ آچاریہ نے میڈیا کو بتایاکہ ہماری یہ ملاقات غیر سیاسی تھی اور اس میں ملک کے آپسی بھائی چارے کو مضبوط بنانے کے لئے مشترکہ کوششیں کرنے پر زور دیاگیا۔اس دوران رام سینا برہمن سماج کے قومی صدر اشونی مدگل سمیت دیگر موجودرہے۔