ارنب گوسوامی اور بی اے آر سی کے سابق سی ای او کے مابین ہوئی واٹس ایپ چیٹ لیک،سوشل میڈیا پر ہنگامہ

نئی دہلی:سپریم کورٹ کے وکیل پرشانت بھوشن نے ایک سوشل میڈیا پوسٹ لکھی ہے۔ اس میں انہوں نے واٹس ایپ چیٹ کے اسکرین شاٹس شیئر کیے ہیں۔ اگر یہ اسکرین شاٹس درست ہیں تو پھر ریپبلک ٹی وی کے ایڈیٹر ارنب گوسوامی کو مزید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے اور ٹی آر پی کے جعلی گھوٹالے کو ایک نئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔دراصل پرشانت بھوشن نے جمعہ کے روز جو وہاٹس ایپ کے اسکرین شاٹ کے چیٹ شیئر کیے ہیں وہ سوشل میڈیا پر وائرل ہوئے۔ ان ناموں میں سے ایک نام ارنب کا ہے ، جبکہ دوسرے نام کے بارے میں دعویٰ کیا جارہا ہے کہ وہ پارتھی داس گپتا کا ہے۔ داس گپتا براڈکاسٹ آڈینس ریسرچ کونسل یعنی بی اے آر سی کے 2013 سے 2019 کے درمیان سی ای او تھے۔ جعلی ٹی آر پی گھوٹالہ میں اسے گرفتار کیا گیا ہے۔ بی اے آر سی وہ ادارہ ہے ، جو ملک کے 45 ہزار گھروں میں ٹی وی پر لگے بار او میٹر کے ذریعہ ہر ہفتے بتاتا ہے کہ کون سا چینل دیکھا جارہا ہے۔ سوشل میڈیا پوسٹوں پر یہ دعویٰ کیا جارہا ہے کہ ارنب اور داس گپتا کے مابین یہ گفتگو 2019 میں ہوئی تھی ۔ اسے ممبئی پولیس کی کرائم برانچ کے پاس 500 صفحوں پر مشتمل واٹس ایپ چیٹ کا حصہ قرار دیا جارہا ہے۔ تاہم ممبئی پولیس نے اب تک ان اسکرین شاٹ کی تصدیق نہیں کی ہے۔