دانش صدیقی کی موت وزیر اطلاعات و نشریات اور پریس کلب کا اظہارِ افسوس

نئی دہلی: افغانستان میں جنگ کو کور کرتے ہوئے ہندوستانی فوٹو جرنلسٹ اور پلٹزر ایوارڈ یافتہ دانش صدیقی کی وفات پر تعزیت پیش کرتے ہوئے مرکزی وزیر اطلاعات و نشریات  انوراگ ٹھاکر نے ان کے کام کو غیرمعمولی قرار دیا۔ٹھاکر نے ٹویٹ کیا کہ دانش صدیقی نے ایک غیر معمولی کارنامہ چھوڑایا ہے۔ انہیں فوٹو گرافی کے لئے پلٹزر ایوارڈ ملا تھا اور انہیں قندھار میں افغان فورسز کی سیکیورٹی ملی تھی۔ میں ان کی ایک تصویر شیئر کر رہا ہوں، خدا ان کی روح کو سکون عطا کرے۔ذرائع کے حوالے سے بتایاگیا ہے کہ صدیقی کو قندھار کے اسپن بولدک ضلع میں جھڑپوں کے دوران مارا گیا۔ ان کی عمر 40 سے 45 سال کے درمیان تھی۔پریس کلب آف انڈیا نے بھی ہندوستانی صحافی کی موت پر تعزیت پیش کی ہے۔ ٹویٹ میں کہا گیا ہے کہ قندھار میں رائٹرز (خبر ایجنسی) کے پلٹزر ایوارڈ یافتہ فوٹو جرنلسٹ دانش صدیقی کی موت سے پریس کلب آف انڈیا افسردہ ہے۔