انا ہزارے نیند سے جاگے،زرعی قوانین پر ملک گیر تحریک چلانے کا انتباہ

احمد نگر:سماجی کارکن انا ہزارے نے کسانوں کی حمایت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر کسانوں کے مطالبات پورے نہیں ہوئے تو وہ کسانوں کی حمایت میں مرکزی حکومت کے خلاف عوامی تحریک شروع کریں گے۔ 83 سالہ انا ہزارے نے کہاکہ لوک پال تحریک نے اس وقت کی کانگریس حکومت کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔ میں کسانوں کے احتجاج کو بھی اسی طرز پر دیکھتا ہوں۔ بھارت بند کے دن میں نے اپنے گاؤں رالے گن سیدھی میں ایک پروگرام کا انعقاد کیا۔ میں نے کسانوں کی حمایت میں ایک دن کا اپواس بھی رکھا تھا۔انا نے کہاکہ اگر حکومت کسانوں کے مطالبات کو پورا نہیں کرتی ہے تو میں ایک بار پھر ’جن آندولن‘ کے لئے بیٹھو ں گا، جو لوک پال تحریک کی طرح ہوگا۔ گزشتہ کچھ مہینوں سے ہزاروں کسان تینوں نئے زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں اور ان قوانین کو مرکزی حکومت سے واپس لینے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ کسانوں کو خوف ہے کہ نئے قانون کی آڑ میں ان کی فصلیں نجی سیکٹر کم قیمت پر خرید سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ کم سے کم سپورٹ قیمت سے بھی کسانوں کو محروم کیا جاسکتا ہے۔