اے ایم یو کو کیو ایس ورلڈ یونیورسٹی رینکنگ میں اعلیٰ مقام

علی گڑھ:حال ہی میں جاری ہونے والی کیو ایس ورلڈ یونیورسٹی رینکنگ میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کو ہندوستانی اور عالمی اعلٰی تعلیم کے منظرنامہ پر ممتاز مقام عطا کیا گیا ہے۔ انجینئرنگ – پٹرولیم کے شعبہ میں اے ایم یو کو ہندوستانی یونیورسٹیوں میں دوئم رینک اور بایولوجیکل سائنسز، اور فارمیسی و فارماکولوجی میں چوتھی رینک دی گئی ہے۔ سبھی ہندوستانی اداروں میں چوتھی پوزیشن اور انجینئرنگ – پٹرولیم زمرہ میں ‘150-101’ عالمی بینڈ کے ساتھ اے ایم یو نے ایک ممتاز تعلیمی ادارے کے طور پر اپنی حیثیت مستحکم کی ہے۔ ملک کے فارمیسی و فارماکولوجی کے اداروں میں اے ایم یو کو گیارہویں رینک عطا کرنے کے ساتھ عالمی اداروں میں 350-301 بینڈ میں رکھا گیا ہے۔ اسی طرح بایولوجیکل سائنسز میں سبھی ہندوستانی اداروں میں بارہویں رینک اور ‘550-501’ عالمی بینڈ میں جگہ دی گئی ہے۔وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کیو ایس رینکنگ میں اعلی مقام حاصل کرکے اے ایم یو ایک بار پھر قومی اہمیت کے حامل ایک ممتاز تعلیمی ادارے کے طور پر ابھرا ہے۔ یونیورسٹی برادری یہ دیکھ کر مسرور ہے کہ اے ایم یو کے اساتذہ، طلبہ اور محققین کووڈ 19 سے پیدا ہونے چیلنجوں کے باوجود یونیورسٹی کو علم و دانش کے ایک اعلٰی مرکز کے طور مستحکم کرنے کے لیے کوشاں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یونیورسٹی کے طلبہ و طالبات کو لائق و فائق سائنسدان، انجینئر، استاد اور رہنما بننے کی تربیت دی جاتی ہے۔یونیورسٹی رینکنگ کمیٹی کے چیئرمین پروفیسر ایم سالم بیگ نے کہا کہ کیو ایس نے اے ایم یو کو تعلیمی شہرت، ملازمت دہندہ کے طور پر شہرت، ملازمت دہندگان اور علمی ماہرین کے عالمی سروے، ریسرچ حوالہ جات اور ایچ انڈیکس جیسی بنیادوں پر مذکورہ رینک عطا کی ہے۔ انہوں نے کہاہے کہ ان درجہ بندیوں سے اعلی تعلیم وتحقیق کی عالمی صورت حال کا علم ہوتا ہے۔